ممبئی میں موسلادھار بارش، کئی مکانات اور دیوار منہدم، اب تک 14 افراد ہلاک

مہاراشٹر کی راجدھانی ممبئی میں موسلادھار بارش کے درمیان کئی مکانات اور دیوار منہد ہونے کے واقعات پیش آئے، جن میں اب تک 14 افراد ہلاک ہو چکے ہیں

تصویر بشکریہ ٹوئٹر
تصویر بشکریہ ٹوئٹر
user

قومی آوازبیورو

ممبئی: مہاراشٹر کی راجدھانی ممبئی میں موسلادھار بارش کے درمیان کئی مکانات اور دیوار منہد ہونے کے واقعات پیش آئے، جن میں اب تک 14 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ چیمبور کے بھرت نگر علاقہ میں دیوار گرنے کے سبب 11 افراد ہلاک ہوئے ہیں جبکہ وکرولی کے سوریہ نگر میں کئی مکانات منہدم ہونے کے سبب اب تک 3 افراد کی ہلاکت کی تصدیق ہوئی ہے۔ دونوں ہی علاقوں میں متعدد افراد کو محفوظ نکالا گیا ہے اور ملبے میں مزید افراد کے دبے ہونے کا خدشہ ہے اور راحت اور بچاؤ کی کارروائی انجام دی جا رہی ہے۔

اطلاعات کے مطابق وکروولی کے سوریہ نگر علاقے میں بارش کے دوران تین سے چار مکانات منہدم ہو چکے ہیں۔ یہاں پر ہلاک ہونے والے تین افراد میں 2 خواتین اور ایک مرد شامل ہیں۔ جائے وقوعہ پر امدادی کاروائیاں لگاتار جاری ہیں کیونکہ ملبے میں مزید کئی افراد پھنسے ہوئے ہیں۔


اسی طرح رات گئے ممبئی کے چیمبور کے بھرت نگر علاقے میں شدید بارش کے دوران ایک کچی آبادی میں دیوار گر گئی۔ اس حادثہ میں 11 افراد ہلاک ہو چکے ہیں جبکہ متعدد مکانات کو بھی نقصان پہنچا ہے۔ فائر بریگیڈ کے مطابق، اب تک 13 افراد کو ملبے سے محفوظ نکالا گیا ہے۔ راحت اور بچاؤ کا کام تاحال جاری ہے۔ زخمیوں کو قریبی اسپتالوں میں داخل کرایا گیا ہے۔ این ڈی آر ایف کی ایک ٹیم بھی جائے وقوعہ پر پہنچ گئی ہے۔

ادھر، ممبئی میں موسلادھار بارش کی وجہ سے ریلوے کی خدمات بھی متاثر ہو گئی ہیں۔ کئی جگہوں پر ریل کی پٹری پانی میں پوری طرح ڈوبی ہوئی نظر آ رہی ہے۔ ریلوے اسٹیشن میں بھی گھنٹوں تک پانی جمع ہو گیا ہے۔ اس کے علاوہ کئی علاقوں میں گھروں کے اندر پانی داخل ہو گیا ہے اور لوگوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس

خیال رہے کہ ممبئی میں گزشتہ کئی دنوں سے بارشوں کا سلسلہ جاری ہے۔ اس مرتبہ مہاراشٹر میں مانسون نے قبل از وقت دستک دی ہے۔ اگرچہ کچھ دنوں پہلے تک بارش کم ہو رہی تھی، تاہم کچھ دنوں سے بارشوں کا سلسلہ تیز ہو گیا۔ محکمہ موسمیات نے مختلف اضلاع کے لئے آرینج الرٹ جاری کیا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔