ہاتھرس واقعہ: ’یہ ویڈیو ان کے لئے ہے جو سچائی سے بھاگ رہے ہیں‘ راہل گاندھی نے بیان کی حقیقت

کانگریس کے سابق صدر نے منگل کے روز یعنی آج ایک ویڈیو ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا- 'یہ ویڈیو ان لوگوں کے لئے ہے جو سچائی سے بھاگ رہے ہیں، ہم بدلیں گے، ملک بدلے گا۔‘

راہل گاندھی، تصویر اے آئی سی دہلی
راہل گاندھی، تصویر اے آئی سی دہلی
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی. کانگریس کے سابق صدر اور رکن پارلیمنٹ راہل گاندھی نے حال ہی میں کہا تھا کہ 'شرمناک حقیقت یہ ہے کہ متعدد ہندوستانی شہری دلتوں، مسلمانوں اور قبائلیوں کو انسان ہی نہیں مانتے'۔ اس ٹوئٹ پر سیاسی جماعتوں اور سوشل میڈیا پر ردعمل کے جواب میں راہل گاندھی نے ایک اور ویڈیو ٹوئٹ کیا ہے۔ کانگریس کے سابق صدر نے منگل کے روز یعنی آج ایک ویڈیو ٹوئٹ کرتے ہوئے کہا- 'یہ ویڈیو ان لوگوں کے لئے ہے جو سچائی سے بھاگ رہے ہیں، ہم بدلیں گے، ملک بدلے گا۔‘

راہل گاندھی جو ویڈیو شیئر کی ہے وہ دی کوئنٹ کی طرف سے جاری کی گئی ہے اور اس میں ہاتھرس کی زمینی حقیقت بیان کی گئی ہے۔ اس ویڈیو میں ہاتھرس کے گاؤں بولگڑھی کے لوگوں سے بات کی جا رہی ہے۔ ویڈیو میں کوئی کہہ رہا ہے کہ دلت ’اچھوت‘ ہوتے ہیں، تو کوئی کہہ رہا ہے کہ انہیں آج بھی بھیدبھاؤ کا شکار بنایا جاتا ہے۔


اس سے پہلے اتوار کے روز وائناڈ سے رکن پارلیمنٹ راہل گاندھی نے ہاتھرس واقعہ پر اتر پردیش کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا تھا کہ وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ اور ان کی پولیس نے کہا کہ کسی کے ساتھ عصمت دری نہیں ہوئی، کیونکہ ان کے اور بہت سے دوسرے ہندوستانیوں کے لئے، وہ (ہاتھرس کیس کی متاثرہ) 'کوئی تھی ہی نہیں'۔ قابل ذکر ہے کہ مبینہ اجتماعی عصمت دری کے بعد اترپردیش کے ہاتھرس میں ایک دلت لڑکی کی موت ہوگئی تھی۔

انہوں نے ٹوئٹ کے ساتھ بی بی سی کی ایک رپورٹ بھی شیئر کی تھی جس میں سوال کیا گیا تھا کہ پولیس عصمت دری کی تردید کیوں کر رہی ہے، جبکہ متاثرہ خود اس کے حوالہ سے بیان دے چکی ہے کہ اس کے ساتھ عصمت دری کی گئی تھی۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔