نہرو کے پیدا کردہ قومی اثاثوں کو فروخت کرکے حکومت لطف اندوز ہو رہی ہے! شیو سینا

سنجے راؤت نے کہا کہ ’’آپ کو ہمیشہ کے لیے نہرو کا مقروض رہنا چاہیے لیکن اس کے بجائے آپ نے تحریک آزادی میں ان کے کردار کو مٹا دیا ہے۔ نہرو کے ساتھ اتنی دشمنی کیوں ہے؟ آپ کو ملک کو جواب دینا چاہیے۔‘‘

شیو سینا لیڈر سنجے راؤت / IANS
شیو سینا لیڈر سنجے راؤت / IANS
user

قومی آوازبیورو

ممبئی: مرکز میں حکمراں بھارتیہ جنتا پارٹی پر شدید حملہ کرتے ہوئے شیو سینا نے اتوار کو کہا کہ آنجہانی وزیر اعظم جواہر لال نہرو کے طویل مدتی نظریات نے ملک کو موجودہ معاشی آفت سے محفوظ رکھا ہے۔ اب موجودہ حکومت ان کے پیدا کردہ قومی اثاثوں کو فروخت کر کے لطف اندوز ہو رہی ہے۔

شیو سینا کے رکن پارلیمنٹ اور چیف ترجمان سنجے راؤت نے کہا کہ ’’بی جے پی حکومت کے سونیا گاندھی، راہل یا پرینکا گندھی سے اختلافات ہو سکتے ہیں لیکن پنڈت نہرو کے لیے دل میں اتنی نفرت کی وجہ سمجھ میں نہیں آتی۔ نہرو کے بنائے ہوئے اداروں کو موجودہ حکومت کی جانب سے معیشت کو تقویت دینے کے نام پر فروخت کیا جا رہا ہے۔‘‘


سنجے راؤت نے یہ تبصرہ ہندوستان کے پہلے وزیر اعظم جواہر لال نہرو اور ملک کے پہلے وزیر تعلیم مولانا ابوالکلام آزاد کی تصاویر مرکزی وزارت تعلیم کی جانب سے انڈین کونسل آف ہسٹوریکل ریسرچ (آئی سی ایچ آر) کی 75 ویں سالگرہ کے موقع پر جاری کئے گئے ایک اشتہار سے ہٹانے کے بعد سامنے آیا ہے۔

نہرو کی قوم سازی کی وراثت پر زور دیتے ہوئے سنجے راؤت نے کہا کہ ’’حکومت اب ان کے پیدا کردہ قومی اثاثوں کو بیچ کر لطف اندوز ہو رہی ہے۔‘‘ سنجے راؤت نے کہا کہ ’’آپ کو ہمیشہ کے لیے نہرو کا مقروض رہنا چاہیے لیکن اس کے بجائے آپ نے تحریک آزادی میں ان کے کردار کو مٹا دیا ہے۔ نہرو کے ساتھ اتنی دشمنی کیوں ہے؟ آپ کو ملک کو جواب دینا چاہیے۔‘‘


پارٹی اخبار سامنا گروپ میں اپنے ہفتہ وار کالم میں مرکزی حکومت پر تنقید کرتے ہوئے راؤت نے کہا کہ نہرو اور آزاد کے تعاون کے بغیر ہندوستانی تحریک آزادی کی تاریخ کبھی مکمل نہیں ہوگی۔ انہوں نے کہا، ’’صرف وہی لوگ جو تاریخ نہیں بنا سکتے، دوسروں کی تاریخ کو مٹانا بہادری سمجھتے ہیں۔ جو لوگ جدوجہد آزادی سے دور رہے اور کبھی حصہ نہیں لیا، اب وہ تحریک آزادی کے ہیروز میں سے ایک ہیں۔ یہ ٹھیک نہیں ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔