سوشانت سنگھ راجپوت کیس کی صحیح جانچ نہ ہونے سے مایوس فین نے کی خودکشی!

سوپان پوپٹ نے اپنا موبائل اسٹیٹس بدلا، پھر ڈی پی میں سوشانت کی تصویر لگائی اور پھر ریلوے ٹریک پر جا کر ٹرین کے نیچے آ گیا۔ ایگت پوری تحصیل کی منیکھامب پولس معاملے کی مزید تفتیش کر رہی ہے۔

سوشانت سنگھ فائل فوٹو (آئی اے این ایس)
سوشانت سنگھ فائل فوٹو (آئی اے این ایس)
user

تنویر

بالی ووڈ اداکار سوشانت سنگھ کی موت ہوئے 5 مہینے گزر گئے ہیں، لیکن اب تک اس سے جڑی کوئی ایسی بات سامنے نہیں آئی ہے جس سے ظاہر ہو کہ سوشانت کے خلاف کوئی سازش ہوئی۔ اس سے سوشانت سنگھ کے کئی فین مایوس ہیں۔ بتایا جا رہا ہے کہ ایک فین نے تو جانچ میں ہوئی ڈھیل سے مایوس ہو کر خودکشی جیسا قدم اٹھا لیا۔ دراصل 3 دن پہلے ناسک کے ایگت پوری تحصیل میں 22 سالہ نوجوان نے ٹرین کے نیچے آ کر خودکشی کر لی، جس کے بارے میں بتایا جاتا ہے کہ وہ سوشانت سنگھ کا بہت بڑا فین تھا۔

پولس جانچ کے دوران یہ بات سامنے آئی کہ سوپان پوپٹ نامی یہ نوجوان سوشانت سنگھ کی موت کے بعد سے ہی تنہا رہ رہا تھا۔ سوپان کے دوستوں کے مطابق سوشانت کی موت کی جانچ صحیح سمت میں نہ ہونے سے وہ کافی غمزدہ تھا اور اس کا تذکرہ ہمیشہ اپنے دوستوں کے درمیان کرتا تھا۔ وہ کہتا تھا کہ سوشانت کے ساتھ بہت غلط ہوا، اسے انصاف ملنا چاہیے۔

خبروں کے مطابق خودکشی سے ایک دن پہلے سوپان پوپٹ نے اپنے موبائل کے وہاٹس ایپ اسٹیٹس پر مراٹھی میں جو کچھ لکھا تھا اس کا ترجمہ ہے ’’کسی کا دکھ کوئی سمجھ نہیں سکتا، جو ان دکھ کو برداشت کرتا ہے وہی درد سمجھ سکتا ہے۔‘‘ پولس جانچ میں یہ بھی پتہ چلا کہ 22 سال کا سوپان اپنی بہن کو بہت پیار کرتا تھا اس لیے بھائی دوج کے تہوار کا انتظار کرنے اور تہوار منانے کے بعد اس نے خودکشی کرنے کا فیصلہ کیا۔

بتایا جاتا ہے کہ پہلے سوپان نے اپنا موبائل اسٹیٹس بدلا، پھر ڈی پی میں سوشانت کی تصویر لگائی اور پھر ریلوے ٹریک پر جا کر ٹرین کے نیچے آ گیا۔ ایگت پوری تحصیل کی منیکھامب پولس معاملے کی مزید تفتیش کر رہی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔