کورونا کا خوف، ایک ہی خاندان کے چار افراد نے کی خودکشی کی کوشش، دو کی موت

مالی بحران سے گزر رہے اس خاندان کے افراد مزید پریشان ہو گئے کہ کورونا انفیکشن ان کی صحت اور روزمرہ کی زندگی کو مزید متاثر کر سکتا ہے۔

فائل تصویر یو این آئی
فائل تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

تمل ناڈو کے مدورئی شہر کے کال میدو میں اتوار کے روز کورونا وائرس سے متاثر ہونے کے خدشہ کے سبب ایک ہی خاندان کے چار ارکان نے زہر کھاکر خودکشی کرنے کی کوشش کی جن میں سے دو کی موت ہوگئی اور دیگر کو اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔

پولس ذرائع نے بتایا کہ کل صبح وی جیوتیکا (23) اور اس کا بیٹا وی رتیش (03) اپنے گھر پر مردہ پائے گئے جبکہ ان کی ماں این لکشمی (46) اور چھوٹے بھائی این سبیراجی (13) کو گورنمنٹ راجا جی اسپتال لے جایا گیا، جہاں وہ زندگی کی جنگ لڑ رہے ہیں۔


ابتدائی جانچ سے معلوم ہوا کہ لکشمی کے شوہر ناگراجن اور ان کی چھوٹی بیٹی انیتا کی موت دیگر بیماریوں کی وجہ سے ہوئی تھی۔اس دوران جیوتیکا نزلہ زکام اور بخار میں مبتلا تھی، جب اس نے آرٹی پی سی آرٹیسٹ کروایا تو وہ کورونا سے متاثر پائی گئیں۔ مالی بحران سے گزر رہے اس خاندان کے افراد مزید پریشان ہو گئے کہ کورونا انفیکشن ان کی صحت اور روزمرہ کی زندگی کو مزید متاثر کر سکتا ہے۔پڑوسیوں کا خیال ہے کہ خاندان کی خودکشی کی وجہ کورونا انفیکشن سے متاثر ہونا تھا۔

پولیس ذرائع کے مطابق ابتدائی تحقیقات سے پتا چلتا ہے کہ اہل خانہ کورونا وائرس سے متاثر تھے اور اسی وجہ سے انہوں نے خودکشی جیسا بڑا قدم اٹھایا۔ پولیس نے کہاکہ ہم دیگر تمام ممکنہ پہلوؤں کی بھی چھان بین کر رہے ہیں۔ پولیس نے اس سلسلے میں ایک کیس درج کر لیا ہے اور تحقیقات کر رہی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔