حیدرآباد میں ملک کی پہلی موبائل ’وائرلوجی لیب‘ کا آغاز

اس لیب کو ڈی آرڈی او نے آئی کلین اینڈ آئی سیف کے اشتراک سے تیار کیا ہے۔ اس لیب میں ٹیکہ کی تیاری کے لئے کام کیا جائے گا اور کورونا وائرس کی طبی جانچ بھی کی جائے گی

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

حیدرآباد: ملک کی پہلی موبائل وائرلوجی لیب کا آغازمرکزی وزیرراج ناتھ سنگھ نے آن لائن کی۔ مرکزی وزیرکشن ریڈی جن کا تعلق حیدرآباد سے ہے کے علاوہ تلنگانہ کے وزیرانفارمیشن ٹیکنالوجی کے تارک راما راؤ نے بھی ای ایس آئی سی، صنعت نگر حیدرآباد میں منعقدہ اس پروگرام میں شرکت کی۔

اس لیب کو ڈی آرڈی او نے آئی کلین اینڈ آئی سیف کے اشتراک سے تیار کیا ہے۔ اس لیب میں ٹیکہ کی تیاری کے لئے کام کیا جائے گا اور کورونا وائرس کی طبی جانچ بھی کی جائے گی۔ اس موقع پر وزیر تارک راما راؤ نے کہا کہ حکومت نے 20 دنوں میں 1500 بستروں والے تلنگانہ انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسس اینڈ ریسرچ کا قیام عمل میں لایا گیا ہے۔ حکومت نے اس وائرس کی روک تھام کے لئے تین سطحی حکمت عملی تیار کی ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نے کورونا وائرس کے شکار افراد کے علاج کے لئے 8 اسپتال قائم کیے گئے ہیں۔ مرکزی حکومت کے رہنمایانہ خطوط پر ریاست میں عمل کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے عوام پر زور دیا کہ وہ کورونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لئے قواعد پرعمل کریں۔ انہوں نے کہا کہ لاک ڈاون کے دنوں میں ریاست میں 88 لاکھ خاندانوں میں چاول اور نقد رقم کی تقسیم کا کام کیا گیا ہے۔

Published: 23 Apr 2020, 8:40 PM