دہلی کے غازی پور اور ٹیکری بارڈر سے رکاوٹوں کو ہٹایا گیا، راستہ جلد کھلنے کی امید

دہلی پولیس کمشنر راکیش استھانہ نے کہا کہ پولیس راستہ کھولنے کے لئے تیار ہے لیکن کسان اس بات کا وعدہ کریں کہ کسی طرح کا کوئی ہنگامہ نہیں ہوگا

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: کسان تحریک کو 11 مہینے سے زیادہ عرضہ گزر چکا ہے اور اب پولیس نے ٹیکری بارڈر اور غازی پور بارڈر سے بیریکیڈنگ (رکاوٹوں) کو ہٹایا شروع کر دیا۔ ان دونوں سرحدوں پر راستہ کھولنے کی تیار بھی شروع کی جا چکی ہے۔ سپریم کورٹ میں سماعت کے دوران یہ مسئلہ اٹھایا گیا تھا کہ راستہ بند ہونے کی وجہ سے عام لوگوں کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ جس کے بعد کسانوں نے کہا تھا کہ راستہ انہوں نے بند نہیں کیا ہے بلکہ دہلی پولیس نے بند کیا ہے۔

دہلی پولیس کمشنر راکیش استھانہ نے کہا کہ پولیس بھی راستہ کھولنے کے لئے تیار ہے لیکن کسان اس بات کا وعدہ کریں کہ کسی طرح کا کوئی ہنگامہ نہیں ہوگا۔ فی الحال جب تک پولیس اور کسانوں کے درمیان پوری طرح سمجھوتہ نہیں ہو جاتا اس وقت تک راستہ بند رہے گا۔


دریں اثنا، ٹیکری بارڈر پر پولیس نے سیمنٹ سے بنایا گیا ایک بیریکیڈ بھی ہٹا دیا ہے۔ نیز سڑک کے بیچ میں لگائی گئی لوہے کی کیلوں کو بھی ہٹایا گیا ہے۔ تاہم سیمنٹ کی ایک رکاوٹ سڑک اب بھی موجود ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔