کسان تحریک: دھرمیندر کا اظہارِ مجبوری، کہا ’حکومت نہیں سن رہی بات‘

دھرمیندر نے ایک ٹوئٹر صارف کو لکھا کہ ’’آپ نہیں جانتے ہم نے سنٹر میں کس کس سے کیا کیا کہا ہے، لیکن بات نہیں بنی۔ بہت افسردہ ہیں ہم... دعا کرتا ہوں کوئی حل جلدی نکل آئے۔‘‘

دھرمیندر، تصویر آئی اے این ایس
دھرمیندر، تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

متنازعہ زرعی قوانین کو لے کر کسانوں کا مظاہرہ جاری ہے اور فلم انڈسٹری کے کئی لوگ بھی ان کی حمایت میں کھڑے نظر آ رہے ہیں۔ بالی ووڈ کے مشہور اداکار دھرمیندر بھی کسانوں کے تئیں اپنی ہمدردی کا اظہار سوشل میڈیا پر کرتے نظر آئے ہیں، لیکن انھوں نے حکومت کے خلاف کسی سختی کا مظاہرہ نہیں کیا جس سے خصوصاً پنجاب کے کسانوں میں مایوسی دیکھنے کو مل رہی ہے۔ اس مایوسی اور ناراضگی کا اظہار کئی بار پنجاب کے کسانوں نے دھرمیندر سے کیا بھی ہے۔ آج ایک بار پھر دھرمیندر کو اس وقت سوشل میڈیا پر ناراضگی کا سامنا کرنا پڑا جب انھوں نے ویڈیو ٹوئٹ کرتے ہوئے کچھ لائنیں لکھیں۔

دراصل آج اپنے ایک ٹوئٹ میں دھرمیندر نے اپنی پرانی تصویروں پر مبنی ایک ویڈیو بنایا اور اس پر شاعری لکھ کر شیئر کر دیا۔ اس میں انھوں نے لکھا ’’سمیلا، اس بے جاں چاہت کا حقدار... میں نہیں... معصومیت ہے سب کی... ہنستا ہوں ہنساتا ہوں... لیکن مایوس رہتا ہوں... اس عمر میں کر کے بے داخل... مجھے میری دھرتی سے... دے دیا صدمہ... مجھے میرے اپنوں نے۔‘‘

دھرمیندر کے ان الفاظ پر ایک پیری نامی ٹوئٹر ہینڈل سے کسان تحریک میں شامل کسانوں کی تصویریں شیئر کرتے ہوئے لکھا گیا کہ ’’یہ تھے آپ کے اپنے... جو اپنے حق کے لیے ابھی بھی لڑ رہے ہیں اور روز کئی مر رہے ہیں... لیکن افسوس آج آپ کے اپنے یہ نہیں کوئی اور ہیں۔‘‘ اس تبصرہ پر دھرمیندر نے صفائی دیتے ہوئے لکھا ’’پیری... یہ بہت افسوسناک ہے... آپ نہیں جانتے ہم نے سنٹر میں کس کس سے کیا کیا کہا ہے، لیکن بات نہیں بنی۔ بہت افسردہ ہیں ہم... دعا کرتا ہوں کوئی حل جلدی نکل آئے... خیال رکھیں... آپ سبھی کو پیار۔‘‘ دھرمیندر نے پنجابی میں بھی ایک کمنٹ کیا جس میں ٹوئٹر صارف سے گزارش کی گئی ہے کہ وہ ان کی مجبوری کو سمجھیں۔ اس سے ظاہر ہے کہ دھرمیندر نے کسانوں کی بات حکومت کے سامنے رکھنے کی کوشش کی، لیکن اس کا کوئی اثر دیکھنے کو نہیں ملا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


next