پانچ ریاستوں کے اسمبلی انتخابات کے تعلق سے الیکشن کمیشن کی پریس کانفرنس، ’کورونا کے دور میں انتخابات کرانا بڑا چیلنج‘

چیف الیکشن کمشنر سشیل چندر نے کہا کہ اس مرتبہ 5 ریاستوں کی 690 اسمبلی سیٹوں کے انتخابات ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ کووڈ سے محفوظ الیکشن کرانا الیکشن کمیشن کا مقصد ہے۔

ویڈیو گریب
ویڈیو گریب
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: الیکشن کمیشن نے اتر پردیش سمیت پانچ ریاستوں میں اسمبلی انتخابات کے سلسلہ میں ہفتہ کے روز دہلی کے وگیان بھون میں پریس کانفرنس طلب کی۔ پریس کانفرنس میں گوا، پنجاب، منی پور، اتراکھنڈ اور اتر پردیش کے اسمبلی انتخابات کے حوالہ سے اطلاعات فراہم کی گئیں۔ کورونا کی روک تھام کے اصولوں کے پیش نظر پریس کانفرنس کا انعقاد وگیان بھون کے بڑے ہال میں کیا گیا۔

پانچ ریاستوں میں اسمبلی انتخابات کی تاریخوں کے اعلان کے لئے چیف الیکشن کمشنر سشیل چندر نے دو دیگر الیکشن کمشنروں راجیو کمار اور انوپ کمار چندر پانڈے کے ساتھ پریس کانفرنس سے خطاب کیا۔ اپنے خطاب کے دوران چیف الیکشن کمشنر سشیل چندر نے کہا کہ اس مرتبہ 5 ریاستوں کی 690 اسمبلی سیٹوں کے انتخابات ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ کووڈ سے محفوظ الیکشن کرانا الیکشن کمیشن کا مقصد ہے۔ انہوں نے کہا کہ کورونا کے دور میں انتخابات کرانا بڑا چیلنج ہے۔


الیکشن کمشنر نے بتایا کہ کورونا سے متاثرہ افراد یا کورونا کے ممکنہ متاثرین کے گھر الیکشن کمیشن کی ٹیم خود پہنچے گی اور ووٹ ڈلوا کر آئے گی۔ اس طرح کے ووٹروں کو بیلٹ پیپر سے ووٹ ڈالنے کا حق حاصل ہوگا۔ الیکشن کمشنر سشیل چندر نے مزید بتایا کہ اس مرتبہ مجموعی طور پر 18.34 کروڑ ووٹر اپنے حق رائے دہی کا اظہار کریں گے۔ ان میں 8.55 کروڑ خواتین شامل ہیں جبکہ 24.9 لاکھ ووٹر پہلی مرتبہ ووٹ ڈالیں گے۔ ان میں سے 11.4 لاکھ لڑکیاں پہلی مرتبہ ووٹر بنی ہیں۔

انہوں نے بتایا کہ تمام پولنگ بوتھ گراؤنڈ فلور پر ہوں گے، تاکہ لوگوں کو ووٹنگ میں آسانی رہے۔ کورونا کی روک تھام کے لئے ہر بوتھ پر ماسک اور سینیٹائزر موجود رہے گا۔ کورونا کی وجہ سے اس مرتبہ ہر بوتھ پر صرف 1215 افراد ہی ووٹ ڈالیں گے، اس سے پہلے 1500 ووٹ ڈالے جاتے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ اس مرتبہ بوتھوں کی تعداد میں 16 فیصد کا اضافہ کیا گیا ہے۔


واضح رہے کہ گوا میں اسمبلی کی 40 سیٹیں ہیں، جبکہ پنجاب میں 117، منی پور میں 60 اور اتراکھنڈ میں 71 اسمبلی حلقے ہیں۔ جبکہ ملک کی سب سے بڑی ریاست اتر پردیش میں اسمبلی کی 403 سیٹیں ہیں۔ الیکشن کمیشن ان ریاستوں میں الیکشن کی تیاری کے سلسلے میں پچھلے کئی دنوں سے مرکز اور ریاستی حکومت کے افسروں اور سیاسی پارٹیوں کے نمائندوں کے ساتھ غور و خوض کا عمل پورا کر چکا ہے۔ ان ریاستوں کی ووٹر لسٹ کا مختصر جائزہ لیا جا چکا ہے۔ کمیشن نے ریاستوں سے الیکشن ڈیوٹی پر لگائے جانے والے ملازمین کی مکمل ٹیکہ کاری پر زور دیا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔