کیا اڈوانی اور جوشی ’بھومی پوجن‘ پروگرام میں شرکت نہیں کریں گے

اتر پردیش کے سابق وزیر اعلی کلیان سنگھ نے اعلان کیا ہے کہ وہ بھومی پوجن پروگرام میں شرکت کے لئے 4 اگست کو ایودھیا پہنچ جائیں گے۔

تصویر سوشل میڈیا اسکرول
تصویر سوشل میڈیا اسکرول
user

یو این آئی

اترپردیش کے سابق وزیراعلی کلیان سنگھ اور مدھیہ پردیش کی سابق وزیراعلی اوما بھارتی ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے لئے 5 اگست کو ہونے والے بھومی پوجن پروگرام میں شرکت کریں گے، لیکن سابق ڈپٹی وزیراعظم لال کرشن آڈوانی اور سابق مرکزی وزیر مرلی منوہر جوشی کے اس موقع پر موجود رہنے کے امکانات کم ہیں۔

کلیان سنگھ نے سنیچر کو لکھنؤ میں اعلان کیا کہ وہ بھومی پوجن پروگرام میں شرکت کے لئے 4 اگست کو ایودھیا پہنچ جائیں گے۔ بابری مسجد ڈھانے کے ملزم بی جے پی لیڈر کلیان سنگھ نے کہا کہ بابری مسجد کو ڈھانے میں ان کا کوئی کردار نہیں ہے اور ان کو سیاسی سازش کے تحت پھنسایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ’’میری آخری خواہش ہے کہ میں جیتے جی رام مندر دیکھ سکوں۔‘‘

اس دوران بابری مسجد ڈھانے کی ایک اورملزمہ اوما بھارتی نے ٹوئٹ کیا ہے کہ وہ تقریب میں حصہ لینے کے لئے چار اگست کو ایودھیا پہنچ جائیں گی۔

حالانکہ سابق ڈپٹی اعظم لال کرشن آڈوانی اور ڈاکٹر مرلی منوہر جوشی کے ’بھومی پوجن‘ پروگرام میں حصہ لینے کے سلسلے میں اب تک کوئی سرکاری اعلان نہیں کیا گیا ہے۔ حالانکہ مہمانوں کی فہرست میں بی جے پی اور راشٹریہ سویم سنگھ کے کئی بڑے لیڈر اور سنت شامل ہیں۔ ان میں لال کرشن آڈوانی، ڈاکٹر مرلی منوہر جوشی، اوما بھارتی، سادھوی رتمبھرا، ونے کٹیار اور ڈاکٹر رام ولاس ویدانتی شامل ہیں۔

next