کورونا سے ڈرنا نہیں، اپنی حفاظت کرنا ضروری ہے: منیش سسودیا

دہلی کے نائب وزیر اعلیٰ منیش سسودیا نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ہوم کوارنٹائن کے ذریعہ 80 سے 90 فیصد مریض صحت یاب ہوئے ہیں، سبھی کو اسپتال میں داخل ہونے کی ضرورت نہیں۔

دہلی کے نائب وزیر اعلیٰ منیش سسودیا (دائیں) اور وزیر صحت ستیندر جین (بائیں)
دہلی کے نائب وزیر اعلیٰ منیش سسودیا (دائیں) اور وزیر صحت ستیندر جین (بائیں)
user

پریس ریلیز

نئی دہلی: دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے کورونا سے دہشت زدہ ہونے کے بجائے احتیاط کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ دہلی میں 80 سے 90 فی صد مریض ہوم کوارنٹائن سے صحت یاب ہو رہے ہیں۔ لہذا، ہر مریض کو اسپتال میں داخل کرنا ضروری نہیں ہے۔ ہماری ٹیم کی صلاح مشورے سے گھر میں بہتر علاج مہیا کر رہی ہیں۔ منیش سسودیا نے یہ بات جمعہ کے روز ایک آن لائن پریس کانفرنس کے ذریعے کہی۔ وزیر صحت ستیندر جین نے بھی پریس کانفرنس سے خطاب کیا۔

سسودیا نے کہا کہ ملک کے ساتھ ساتھ دہلی میں بھی کورونا انفیکشن کے کیسز میں اضافہ ہوا ہے۔ لیکن گھبرانے کی ضرورت نہیں ہے۔ ہمیں اپنی حفاظت کرنی چاہیے۔ کل دہلی میں کورونا کی وجہ سے 13 اموات ہوئیں۔ اضافی طور پر، 69 پرانے کیسز بھی شامل کیے گئے ہیں۔ اس کی وجہ سے کل ہی 82 اموات کی اطلاع ہوگی۔ لیکن گھبرانے کی ضرورت نہیں ہے۔ گزشتہ روز ہونے والی 13 اموات کے علاوہ، باقی 69 واقعات پچھلے 34 دن کے ہیں۔ مختلف دنوں میں ہلاکتوں کی اطلاع دیر سے دی جارہی ہے۔ ان میں صفدر گنج اسپتال کے 52 کیسز شامل ہیں۔

سسودیا نے کہا کہ ہوم کوارنٹائن کے دوران گھر میں الگ کمرے کا بندوبست کرنا بہتر ہے۔ اگر علیحدہ کمرے مہیا نہیں کیے گئے ہیں تو، الگ الگ بستر کا انتظام کیا جاسکتا ہے۔ کورونا سے بچنے کے لئے تمام احتیاطی تدابیر اختیار کرنا ضروری ہیں۔ کسی چیز کو چھونے سے کورونا نہیں ہوگا۔ منہ، ناک یا آنکھوں سے کورونا سے متاثرہ شخص کے تھوک کے بوندوں سے انفیکشن ہوگا۔ لہذا، کسی بھی چیز کو چھونے کے فوراً بعد ہی صابن سے ہاتھ دھونے سے انفیکشن نہیں ہوگا۔ سسودیا نے کہا کہ دہلی میں صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد تیزی سے بڑھ رہی ہے۔ اگر ہم سب مل کر کوشش کریں اور احتیاط کریں تو کورونا پر قابو پایا جاسکتا ہے۔

وزیر صحت ستیندر جین نے اس موقع پر کہا کہ اب تک دہلی میں کورونا انفیکشن کے کل 17386 واقعات ہوئے ہیں۔ پچھلے 24 گھنٹوں میں 1106 نئے واقعات ہوئے ہیں۔ اب تک 7846 افراد ٹھیک ہوچکے ہیں۔ ان میں سے کل 351 افراد بازیاب ہوئے ہیں۔ دہلی میں اب تک 398 اموات ہوچکی ہیں۔

ستیندر جین کے مطابق، صفدر گنج اور دیگر اسپتالوں کی پرانی اطلاعات سامنے آنے کے بعد یہ تازہ ترین اعداد و شمار ہیں۔ جین نے کہا کہ اس وقت دہلی میں 2100 مریض داخل ہیں۔ فی الحال 5000 سے زیادہ اضافی بستر ہیں۔ یہ 1400 نجی اسپتالوں اور 3700 بستروں پر مشتمل ہے۔ ہم اس تعداد میں مزید اضافہ کر رہے ہیں۔ بستروں کی تیاری مریضوں کی تعداد سے دوگنی ہے۔ وینٹی لیٹروں پر اس وقت 28 مریض موجود ہیں، جبکہ 300 خالی وینٹی لیٹر موجود ہیں۔ ستیندر جین نے کہا کہ ہم کورونا سے لڑنے کے لئے معاشرتی دوری، ماسک لگانے اور ہینڈ واش کے عمل پر زور دے رہے ہیں۔ کورونا کے مریض دو ہفتوں میں گھر کے ایک الگ کمرے میں ٹھیک ہوسکتے ہیں۔ زیادہ تر لوگ گھروں میں صحت یاب ہو رہے ہیں۔

Published: 29 May 2020, 6:40 PM