حکومت کی کارروائی سے کانگریس کارکنان خوف زدہ نہیں ہوں گے: دگ وجے

دگ وجے سنگھ نے کہا کہ حکومت جس طرح سے کانگریس کارکنان سے سیاسی دشمنی نکال رہی ہے، وہ ناانصافی پر مبنی ہے۔ کانگریس کارکنان اس سے خوف زدہ نہیں ہوں گے۔

فائل تصویر آئی اے این ایس
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

مدھیہ پردیش کے سابق وزیر اعلیٰ اور کانگریس کے سینئر رہنما دگ وجےسنگھ نے الزام لگایا کہ کانگریس کے کارکنان حکومت کی ایذا رسانی کا شکار ہو رہے ہیں اور پارٹی ایسے ہر کارکنان کے لیے قانونی لڑائی لڑے گی۔ اسی سلسلے میں، سابق وزیر اعلیٰ کمل ناتھ دتیا میں حکومت کے مظالم کے خلاف ریلی نکالیں گے۔

مسٹر کمل ناتھ نے مدھیہ پردیش میں کانگریس کے لیڈروں اور کارکنوں کے خلاف بدلہ لینے کی غرض سے جھوٹے مقدمے درج کیے جانے کا الزام لگاتے ہوئے’ حکومت کے مظالم کے خلاف مزاحمتی کمیٹی‘تشکیل دی ہے۔ اس کمیٹی کی پہلی میٹنگ ریاستی کانگریس کے صدر دفتر میں مسٹر سنگھ کی صدارت میں ہوئی۔


میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر سنگھ نے کہا کہ حکومت جس طرح سے کانگریس کارکنوں سے سیاسی دشمنی نکال رہی ہے، وہ ناانصافی پر مبنی ہے۔ کانگریس کارکنان اس سے خوف زدہ نہیں ہوں گے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ ریاست سے لے کر تحصیل کی سطح تک کارکنوں کو سیاسی بنیاد پردیوانی، ریونیو اور فوجداری کے مقدمات میں پھنسا کر ذلیل کیا جا رہا ہے۔ ایسے میں کانگریس ان کی لڑائی لڑے گی اور ان کو قانونی تحفظ دیا جائے گا۔

مسٹر سنگھ نے کہا کہ اب تک صرف دتیا ضلع سے 50 سے زیادہ معاملے کمیٹی کے سامنے آئے ہیں، جن میں کانگریس لیڈروں اور کارکنوں کے خلاف جھوٹے مقدمات درج کیے گئے ہیں۔ انہوں نے وزیر داخلہ نروتم مشرا پر کانگریس کے کارکنوں کو نشانہ بنانے کا الزام لگایا۔ انہوں نے کہا کہ ان تمام شکایات کو جمع کرنے کے بعد کانگریس کا ایک وفد مسٹر کمل ناتھ کی قیادت میں وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان سے ملاقات کرے گا۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔