ڈیزل-پٹرول ہوا بے قابو، لگاتار 14ویں دن قیمتوں میں اضافہ

7 جون سے ملک میں پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔ ان 14 دنوں میں پٹرول 7.62 روپے یعنی 10.63 فیصد اورڈیزل 8.28 روپے یعنی 11.93 فیصد مہنگا ہوچکا ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

عوام پر مہنگائی کی مار لگاتار جاری ہے اور اپوزیشن پارٹیوں کے ذریعہ لگاتار مخالفت کے باوجود ڈیزل و پٹرول کی قیمتوں میں اضافہ کا سلسلہ 14ویں دن بھی جاری رہا۔ ہندوستان کی راجدھانی دہلی میں 20 جون کو پٹرول کی قیمت میں 51 پیسے جب کہ ڈیزل کی قیمت میں 61 پیسے فی لیٹر کا اضافہ کیا گیا ہے۔ یہاں قابل ذکر ہے کہ تیل کی قیمتوں میں اضافہ کی وجہ سے دیگر اشیاء کی قیمتوں پر بھی اثر پڑتا ہے اور کئی طرح سے عوام کو مہنگائی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ پٹرول و ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ کو لے کر لوگ پریشان ہیں۔

میڈیا ذرائع کے مطابق ہندوستان کی سب سے بڑی آئل مارکیٹنگ کمپنی انڈین آئل کارپوریشن کے مطابق دہلی میں آج پٹرول کی قیمت 51 پیسے اضافے کے ساتھ 78.88 روپے فی لیٹرہوگئی جو3 نومبر 2018 کے بعد کی بلند ترین سطح ہے۔ ڈیزل کی قیمت میں 61 پیسے اضافے کے ساتھ یہ ریکارڈ 77.67 روپے فی لیٹر پر فروخت ہورہاہے۔7 جون سے ملک میں پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔ ان 14 دنوں میں پٹرول 7.62 روپے یعنی 10.63 فیصد اورڈیزل 8.28 روپے یعنی 11.93 فیصد مہنگا ہوچکا ہے۔

کولکاتا اور ممبئی میں پٹرول کی قیمتیں 49۔99 پیسے اضافے کے بعد بالترتیب 80.62 روپے اور 85.70 روپے فی لیٹر ہوگئیں۔ چنئی میں اس کی قیمت 45 پیسے اضافے سے 82.27 روپے فی لیٹر ہوگئی۔ ڈیزل54 پیسے اضافے سے 73.07 روپےکلکتہ میں ، ممبئی میں 58 پیسے اضافے سے 76.11 روپے اور چنئی میں 52 پیسے اضافے سے75.29 روپے فی لیٹر پرہو چکا ہے۔

next