واٹس ایپ کو ہیک کر کے بینک اکاؤنٹس سے رقم نکالی، ایک نائجیرین گرفتار

ڈپٹی کمشنر آف پولیس دیپک یادو کا کہنا ہے کہ یہ اپنے آپ میں ایک انوکھا معاملہ ہے، جس میں واٹس ایپ کو ہیک کرکے بینک کھاتوں سے رقم نکالی گئی ہے۔

فائل تصویر یو این آئی
فائل تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

دہلی پولیس نے ایک نائجیرین شہری کو گرفتار کیا ہے جو واٹس ایپ کو ہیک کرنے اور بینک کھاتوں سے رقم نکالنے میں ملوث ایک بین الاقوامی گینگ کا رکن ہے۔

نئی دہلی کے ضلع پولیس کمشنر دیپک یادو نے ہفتہ کو بتایا کہ ملزم اوکوودیری پاسکل (40) کو بنگلورو سے گرفتار کیا گیا ہے۔ اس کے قبضے سے 20,000 روپے اور جرم میں استعمال ہونے والے سات اے ٹی ایم کارڈ اور چار موبائل سم کارڈ برآمد ہوئے ہیں۔


انہوں نے بتایا کہ تحقیقات کے دوران پتہ چلا کہ یہ معاملہ بین الاقوامی سائبر فراڈ سے متعلق ہے، جس کے تحت پورے ملک میں سینکڑوں دیگر بے گناہ لوگوں کو دھوکہ دیا گیا ہے۔

مسٹر یادو نے کہا کہ رنگلال جمودا نامی شخص نے 5 نومبر کو تلک مارگ پولیس اسٹیشن میں ایف آئی آر درج کرائی تھی۔ متاثر نے الزام لگایا کہ 2 نومبر کو واٹس ایپ کے فیچر کو اپ گریڈ کرنے کے نام پر نامعلوم موبائل نمبر سے اس کے نمبر پر ایک میسج آیا تھا۔ میسج میں چھ ہندسوں کا کوڈ بھیجا گیا، اسے موبائل فون میں ڈالنے سے موبائل کی اسکرین سیاہ ہوگئی اور کام کرنا چھوڑ دیا۔ اس کے بعد ہیکر نے مختلف بہانوں سے ان کے رشتہ داروں کو فیڈرل بینک اور آئی ڈی بی آئی بینک کے اکاؤنٹس میں رقم بھیجنے کے لیے پیغامات بھیجے۔ بینک اکاؤنٹ میں رقم آتے ہی ملزمان مختلف اے ٹی ایم کارڈز کی مدد سے اس سے رقم نکال لیتے تھے۔


انہوں نے بتایا کہ تلک مارگ اور ضلع کے خصوصی عملہ کی ٹیم نے ملزم کو 16 نومبر کو بنگلورو سے گرفتار کیا۔ ٹرانزٹ تحویل میں لینے کے بعد پولیس اسے جمعہ کو دہلی لے آئی۔ اسے عدالت میں پیش کیا گیا، جہاں ملزم اوکووڈیری پاسکل کو آٹھ دن کے پولیس ریمانڈ پر بھیج دیا گیا۔

نئی دہلی کے ڈپٹی کمشنر آف پولیس مسٹر یادو کا کہنا ہے کہ یہ اپنے آپ میں ایک انوکھا معاملہ ہے، جس میں واٹس ایپ کو ہیک کرکے بینک کھاتوں سے رقم نکالی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ابتدائی تفتیش میں اندیشہ ظاہر کیا جا رہا ہے کہ اس کے پیچھے بین الاقوامی سطح پر کئی لوگ ملوث ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


Published: 21 Nov 2021, 6:41 AM