منریگا میں گھوٹالہ! گجرات میں مرے ہوئے آدمی کو چار سال سے مل رہی تھی مزدوری

موہن سنگھ راٹھوا نے کہا کہ فوت ہوچکے شخص کے علاوہ منریگا کے ریکارڈ میں کئی ایسے لوگوں کو ادائیگی کیے جانے کا ذکر ہے جو نابالغ ہیں یا وہ سرکاری شعبہ میں ملازمت کر رہے ہیں۔

علامتی، تصویر آئی اے این ایس
علامتی، تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

گاندھی نگر: مہاتما گاندھی قومی دیہی روزگار گارنٹی قانون (منریگا) میں بےضابطگی کا ایک تازہ معاملہ گجرات سے سامنے آیا ہے۔ یہاں کے چھوٹا ادے پور ضلع کی بوڈیلی تحصیل کے ایک فوت شخص کو جاب کارڈ جاری کر اجرت کی ادائیگی کا معاملہ منظر عام پر آیا ہے، جس کی موت چار سال قبل واقع ہو چکی ہے۔ کانگریس کے مقامی رکن اسمبلی موہن سنگھ راٹھوا نے اس گھوٹالہ کو گجرات اسمبلی میں اٹھایا اور گجرات کے وزیر زراعت نے بھی اس کا اعتراف کیا۔

دراصل، گجرات میں منریگا منصوبہ کے تحت ادائیگی میں لگاتار گھوٹالوں کا انکشاف ہو رہا ہے۔ بجٹ اجلاس کے وقفہ سوالات کے دوران منگل کے روز موہن سنگھ راٹھوا نے اپنے انتخابی حلقہ انتخاب چھوٹا ادے پور میں ہوئیں کئی بے ضابطگیوں کا تذکرہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ منریگا کے ریکارڈ میں کئی ایسے لوگوں کو ادائیگی کیے جانے کا ذکر ہے جو نابالغ ہیں یا جو سرکاری شعبہ میں ملازمت کر رہے ہیں۔


اس کے علاوہ انہوں نے ایوان میں ایک منفرد معاملہ کا ذکر کیا۔ انہوں نے کہا کہ ’’بوڈیلی میں ایسے شخص کو ادائیگی کی گئی تھی، جس کی چار سال قبل موت واقع ہو چکی ہے۔ ایک دوسرے معاملہ میں پرائمری اسکول کے استاد مال سنگھ رتھاوا کو اس منصوبہ کے تحت 1120 روپے کی ادائیگی کی گئی یعنی کہ کئی چھلاوے بھی اس منصوبہ کا فائدہ اٹھا رہے ہیں۔‘‘

ریاستی اسمبلی میں سب سے سینئر رکن اسمبلی موہن سنگھ راٹھوا نے کہا کہ ’’منصوبہ میں اس قدر گھوٹالہ ہوا ہے کہ 13 اور 15 سال کے بچوں کو بھی مستفیض ظاہر کیا گیا ہے اور ان کے کھاتوں میں بھی 1120 روپے جمع کر دیئے گئے ہیں۔‘‘


اس مسئلہ پر جواب میں وزیر زراعت، دیہی ترقی اور ٹرانسپورٹ کے وزیر آر سی فالدو نے الزامات اور بے ضابطگیوں کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ ’’ہمیں بھی ادائیگی میں کچھ بے ضابطگیاں ملی ہیں اور 2020 میں کارروائی بھی عمل میں لائی گئی ہے۔ کچھ ملازمین کو برخاست بھی کیا گیا ہے۔‘‘

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔