ضمنی انتخاب LIVE: اکھیلیش مبارکباد دینے مایاوتی کےگھر پہنچے

بی جے پی بھگوان کو دھوکہ دے رہی ہے: رام گوپال

راجیہ سبھا میں سماج وادی پارٹی کے پارٹی لیڈر رام گوپال یادو نے کہا کہ اترپردیش میں وزیر اعلی یوگی ادیتیہ ناتھ کی قیادت میں بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت نے عوام کا اعتماد کھودیا ہے۔
یادو نے یہاں نامہ نگاروں کے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ اترپردیش میں پھول پور اور گورکھ پور لوک سبھا سیٹ کے ضمنی الیکشن میں سماج وادی پارٹی کی فتح سے یہ واضح ہوگیا ہے کہ ریاست کی یوگی حکومت نے لوگوں کا اعتماد کھودیا ہے۔
انہوں نے کہا کہ اترپردیش کے عوام سمجھ چکے ہیں کہ بی جے پی پورے ملک میں عوام کو بے وقوف بنارہی ہے اور خود بھگوان کو دھوکہ دے رہی ہے۔

الھلیش یادو نے مایاوتی کا شکریہ ادا کیا

اتر پردیش کے ضمنی انتخاب کے نتائج کے بعد اکھلیش یادو نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ’’میں گورکھپور اور پھولپور کے عوام اور مایاوتی جی کو شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں۔‘‘

انہوں نے مزید کہا ’’یہ وزیر اعلیٰ اور نائب وزیر اعلیٰ کے انتخابنی حلقوں کے عوام کا غصہ ہے۔ ملک کے دیگر علاقوں کے لوگوں میں کتنا غصہ ہے، یہ تصور کیا جا سکتا ہے۔‘‘سابق وزیر اعلی اکھیلیش یادو جیت کی مبارکباد دینے کے لئے بی ایس پی سپریمو مایاوتی کے گھر گئے۔ گھر پہنچ کر انہوں نے اس جیت کے لئے مایا وتی کا شکریہ ادا کیا۔

جشن کی تصویری جھلکیاں

پٹنہ میں جشن کی تصویری جھلکیاں

 

لکھنؤ میں جشن کی تصویری جھلکیاں

 

ایس پی-بی ایس پی نے سیاسی سودے بازی کی: یوگی

یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا ’’یہ بی ایس پی-ایس پی کی جو سیاسی سودے بازی ہے، ملک کی ترقی کو روکنے کے لئے بنی ہے۔ اس کے بارے میں ہم اپنی حکمت عملی تیار کریں گے۔‘‘

پھولپور اور گورکھپور میں کانگریس کی ضمانت ضبط

ہار کا جائزہ لیں گے: یوگی آدتیہ ناتھ

پھولپور اور گورکھپور میں بی جے پی کی کراری شکست کے بعد اتر پردیش کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ’’ہم عوامی رائے کو تسلیم کرتے ہیں۔ یہ نتیجہ ناقابل یقین ہے، ہم ہار کا جائزہ لیں گے۔ جیتنے والے امیدواروں کو مبارکباد۔‘‘

پھولپور سے ایس پی امیدوار کی جیت کا اعلان

سماجوادی پارٹی کے امیدوار ناگیندر پال سنگھ پٹیل نے پھولپور لوک سبھا سیٹ سے جیت حاصل کر لی ہے۔ انہوں نے بی جے پی کے امیدوار کو 59613 ووٹوں سے شکست دی۔

لوگوں میں بی جے پی کے خلاف غصہ: راہل

کانگریس صدر راہل گاندھی نے گورکھپور اور پھولپور کے نتائج پر اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے فتحیاب امیدواروں کو مبارکباد پیش کی۔ انہوں نے بی جے پی پر نشانہ سادھتے ہوئے ٹوئٹ میں لکھا ’’نتائج سے واضح ہے کہ ووٹروں میں بی جے پی کے خلاف بہت غصہ ہے اور وہ ایسے غیر بی جے پی امیدوارو کے لئے ووٹ کریں گے جس کے جیتنے کی سب سے زیادہ امید ہو۔‘‘

راہل گاندھی نے مزید کہا ’’کانگریس یو پی کی از سر نو تعمیر کے لئے پر عزم ہے، یہ رات و رات نہیں ہوگا۔‘‘

ایس پی نے حمایت کے لئے مایاوتی کا اداکیا شکریہ

اترپردیش میں گورکھپور اور پھولپور پارلیمانی حلقوں میں جیت کی طرف بڑھ رہی سماج وادی پارٹی نے بہوجن سماج پارٹی کی صدر مایاوتی کا شکریہ ادا کیا ہے۔
اسمبلی میں اپوزیشن اور ایس پی کے سینئرلیڈر رام گووند چودھری نے مایاوتی سے ملکر دونوں سیٹوں پر حمایت دینے کےلئے شکریہ ادا کیا۔ چودھری نے کہا ’’بہن جی ،دونوں سیٹوں پر حمایت کے لئے ہم لوگ آپ کے ممنون ہیں ۔‘‘

ممتا کی اکھلیش، مایاوتی اور لالو کو مبارکباد

مغربی بنگال کی وزیرا علیٰ ممتا بنرجی نے اترپردیش اور بہارکے ضمنی انتخاب میں سماجوادی اور بہوجن سماجوادی پارٹی اتحاد اور بہار لالو۔کانگریس اتحادکی شاندار جیت پر مبارک باد پیش کی ہے۔ سماجوادی اور بہوجن سماج پارٹی کے درمیان اتحاد کے بعد ممتا بنرجی کی خصوصی دلچسپی سے بنگال میں نیا سیاسی منظر نامہ سامنے آنے کی امید بڑھ گئی ہے۔

کیشو پرساد نے شکست تسلیم کی

یو پی کے نائب وزیر اعلیٰ کیشو پرساد یادو نے کہا ’’ہمیں امید نہیں تھی کہ بی ایس پی کے تمام ووٹ ایس پی کی جانب اس طرح منتقل ہو جائیں گے۔ آخری نتائج کے اعلان پر ہم ہار کا جائزہ لیں گے اور اس بات کو مد نظر رکھتے ہوئے حکمت عملی تیار کریں گے کہ 2019 میں بی ایس پی، ایس پی اور کانگریس ایک ساتھ آ سکتی ہیں۔‘‘

ممتا کی مبارکباد پر لالو کا جواب

عمر عبداللہ کی تجسوی یادو اور میسا بھارتی کو مبارکباد

عوام کے پیار نے طاقت دی: تیجسوی یادو

تیجسوی یادو نے

سماجوادی کی سبقت برقرار

پھولپور لوک سبھا ضمنی انتخاب کے 15 مراحل کے اختتام کے بعد سماجوادی پارٹی کے امیدوار 22848 ووٹوں سے آگے چل رہے ہیں۔ سماجوادی پارٹی کو اب تک 167708، بی جے پی کو 144166، عتیق احمد کو 20468 اور کانگریس کو 7882 ووٹ حاصل ہوئے ہیں۔

گورکھپور لوک سبھا سیٹ پر سماجوادی پارٹی 19201 ووٹوں سے آگے ہے۔ سماجوادی پارٹی کو اب تک 212061 اور بی جے پی کو 192860 ووٹ حاصل ہوئے ہیں۔

لکھنؤ میں بوا-بھتیجا زندآباد کے نعرے بلند

بہار کے ارریہ میں آر جے ڈی کے امیدوار سرفراز عالم 23187 ووٹوں سے آگے چل رہے ہیں۔ سرفراز کو اب تک 333050 ووٹ حاصل ہوئے ہیں جبکہ بی جے پی کو 309863 ووٹ ہی مل سکے ہیں۔

لکھنؤ: ایس پی کے دفتر میں جشن

امت شاہ دہلی واقع پارٹی کے دفتر میں پہنچ گئے ہیں۔

گورکھپور میں ایس پی کی سبقت تقریباً 15 ہزار پہنچی

گورکھپور میں 12ویں سماجوادی پارٹی کے امیدار پروین کمار نشاد کو 180155 ووٹ حاصل ہو چکے ہیں جبکہ بی جے پی کے اوپیندر دت شکلا کو 165487 ووٹ ملے ہیں۔

گورکھپور، پوھلپور میں ایس پی اور ارریہ میں آر جے ڈی کی سبقت

گورکھپور میں سماجوادی پارٹی کے امیدوار پروین کمار نشاد 163941 ووٹ لے کر سب سے آگے چل رہے ہیں جب بی جے پی کے اوپیندر دت شکلا کو 150062 ووٹ حاصل ہوئے ہیں۔

پھولپور میں سماجوادی پارٹی کے ناگیندر پرتاپ سنگھ پٹیل 155314 ووٹ حاصل کر چکے ہیں جبکہ بی جے پی کے کوشلیندر سنگھ پٹیل کو 134819 ووٹ ہی ملے ہیں۔

ادھر بہار کی ارریہ لوک سبھا سیٹ پر آر جے ڈی کے سرفراز عالم بی جے پی کے امیدوار سے تقریباً 12151 ووٹوں سے آگے چل رہے ہیں۔

بی جے پی کو لوگوں نے خارج کر دیا ہے: کانگریس

کانگریس کے رہنما جیوتیرادتیہ سندھیا نے بہار اور اتر پردیش کے ضمنی انتخابات پر بات کرتے ہوئے کہا ’’لوگوں نے کسان مخالف، نوجوان مخالف اور خواتین مخالف پالیسیوں پر آواز اٹھائی ہے۔ بی جے پی کو لوگوں نے باہر کا راستہ دکھا دیا ہے‘‘

پھولپور میں ایس پی کی 15 ہزار سے زیادہ کی سبقت

پھولپور میں 11 مراحل کی ووٹ شماری پوری ہو چکی ہے اور اب تک سماجوادی پارٹی کے امیدوار ناگیندر سنگھ پٹیل کو 15713 ووٹوں کی برتری حاصل ہو گئی ہے۔

سماجوادی پارٹی کی ریاستی الیکشن کمیشن کو شکایت

سماجوادی پارٹی کے رہنما نریش اتم پٹیل نے ریاستی الیکشن کمیشن سے شکایت کی ہے۔ شکایت میں کہا گیا ہے کہ میڈیا اور لوگوں کو گنتی کے مرکز سے ہٹایا گیا۔ انہوں نے الزام عائد کیا ہے کہ انتظامیہ بی جے پی کے امیدوار کو جتانے کا کام کر رہی ہے۔

الیکشن کمیشن نے شکایت پر جواب دیتے ہوئے کہا کہ ’’میڈیا کو ذاتی طور پر ہر مرحلہ کے بعد مطلع کیا جا رہا ہے اور مراحل کی ووٹ شماری کے حوالہ سے معلومات دے دی گئی ہے۔‘‘

گورکھپور اور پھولپور دونون سیٹوں پر سماجوادی پارٹی کی سبقت

پھولپور میں سماجوادی پارٹی کے کارکنان نے اپنے امیدوار کی سبقت کے پیش نظر ابھی سے جشن منانا شروع کر دیا ہے۔ وہ ایک دوسرے مٹھائی کھلا کر مبارکبات پیش کر رہے ہیں۔ یہاں 11ویں مرحلہ کی ووٹ شماری جاری ہے اور ابھی تک سماجوادی پارٹی کے امیدوار ناگیندر سنگھ پٹیل 14299 ووٹوں سے آگے چل رہے ہیں۔

گورکھپور میں سماجوادی پارٹی کے پروین کمار نشاد کو 59907 ووٹ حاصل ہو چکے ہیں جب کہ ان کے قریبی بی جے پی کے امیدوار اوپیندر دت شکلا کو 56945 ووٹ ملے ہیں۔

بہار کی ارریہ سیٹ پر بی جے پی امیدوار پردیپ سنگھ پیچھے ہونے کے بعد پھر آگے ہو گئے ہیں۔ چوتھے مرحلہ کی گنتی کے بعد بی جے پی کو 80732 ووٹ ملے ہیں جبکہ آر جے ڈی کو 73489 ووٹ حاصل ہو چکے ہیں۔

بہار: جہان آباد میں آر جے ڈی، بھبھوا میں بی جے پی کی برتری

بہار کی بھبھوا اسمبلی سیٹ سے 8 مراحل کے اختتام کے بعد بی جے پی 19738 ووٹوں سے آگے ہے جبکہ جہان آباد میں آر جے ڈی امیدوار 10 مراحل کے اختتام کے بعد 29551 ووٹوں سے آگے ہیں۔

پھولپور میں سماجوادی پارٹی کے امیدوار سبقت برقرار رکھے ہوئے ہیں۔ یہاں سماجوادی پارٹی کو 87272 ووٹ حاصل ہو چکے ہیں اور اس کی سبقت 9927 ووٹوں سے آگے ہیں۔

گورکھپور میں میڈیا پر پابندی، لکھنؤ اسمبلی میں ہنگامہ

گورکھپور میں ووٹ شماری کے کاونٹر میں میڈیا کے داخلہ پر پابندی عائد کئے جانے کے معاملہ پر اتر پردیش کی لکھنؤ واقع اسمبلی میں حزب اختلاف نے ہنگامہ آرائی کی۔ سماجوادی پارٹی کے رام گووند نے اس معاملہ کو اٹھایا۔ سماجوادی پارٹی کا الزام ہے کہ جمہوریہ کا گلا گھونٹنے کا کام کیا جا رہا ہے۔

اسمبلی میں ہنگامہ آرائی کے پیش نظر کارروائی کو 12.20 تک ملتوی کر دیا گیا۔

گورکھپور میں بھی ایس پی امیدوار کی برتری

  • اتر پردیش کے ضمنی انتخابات میں بڑا الٹ پھیر نظر آ رہا ہے جہاں گورکھپور اور پھولپور دونوں جگہ سماجوادی پارٹی نے سبقت بنا لی ہے۔ تیسرے مرحلہ کے نتائج کے مطابق سماجوادی پارٹی 1523 ووٹوں سے آگے چل رہی ہے۔ سماجوادی پارٹی کو تیسرے مرحلہ تک 44979 اور بی جے پی کو 43456 ووٹ حاصل ہو چکے ہیں۔
  • بہار کی جہان آباد سیٹ پر 10 مراحل کی ووٹ شماری کے بعد آر جے ڈی کے سودئے یادو تقریباً 15 ہزار ووٹ سے آگے چل رہے ہیں۔

گورکھ پور میں میڈیا کو اطلاعات دینے پر روک

گورکھ پور میں 8ویں مرحلہ کی گنتی چل رہی ہے لیکن میڈیا رپورٹوں کے مطابق وہاں پہلے مرحلہ کے اعداد شمار ہی بتائے جا رہے ہیں۔ میڈیا اہلکاروں کو اطلاعات نہیں دی جا رہی ہیں۔ ضلع مجسٹریٹ وہاں خود موجود ہیں۔

ارریہ ممیں سرفراز عالم پھر آگے

نیوز 18 کے مطابق بہار کی ارریہ لوک سبھا سیٹ پر آر جے ڈی کے امیدوار سرفراز عالم نے پھر سے برتری حاصل کر لی ہے۔ فی الحال وہ بی جے پی کے پردیپ سنگھ سے 4203 ووٹوں سے آگے چل رہے ہیں۔

گورکھ پور میں بی جے پی کی برتری برقرار

گورکھ پور میں ابھی تک گنتی میں بی جے پی امیدوار اوپیندر دشکلا 2477 ووٹوں سے آگے چل رہے ہیں۔ انہیں کل 15577 ووٹ حاصل ہوئے ہیں۔ وہیں سماجوادی پارٹی کے پروین نشاد کو 13911 ووٹ حاصل ہوئے ہیں۔ یہاں کانگریس کی امیدوار کو 543 ووٹ ملے ہیں۔

ناگیندر پٹیل 2477 وٹوں سے آگے

پھول پور میں ابھی تک کی ووٹ شماری کے مطابق سماجوادی پارٹی کے امیدوار ناگیندر سنگھ پٹیل 2477 ووٹوں سے آگے چل رہے ہیں۔ انہیں کل 12383 ووٹ حاصل ہوئے ہیں جبکہ بی جے پی کے کوشلیندر سنگھ پٹیل کو 9906 ووٹ حاصل ہوئے ہیں۔

بہار کی ارریہ لوک سبھا سیٹ پر آر جے ڈی کے سرفراز عالم معمولی فرق سے پیچھے ہو گئے ہیں۔ جہان باد میں آر جے ڈی جبکہ بھبھوا میں بی جے پی آگے چل رہی ہی۔

گورکھ پور میں سماجوادی پارٹی کے امیدوار پروین نشاد نے ای وی ایم پر سوالات کھڑے کردئے ہیں۔ انہوں نے الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ مشینوں سے چھیڑ خانی کر کے نتائج تبدیل کئے جا رہے ہیں۔

ایس پی کے ناگیندر پٹیل 1437 ووٹوں سے آگے

پھول پور میں تین مراحل کی گنتی پوری ہونے کے بعد سماجوادی پارٹی کے امیدوار ناگیندر سنگھ پٹیل 1437 ووٹوں سے آگے چل رہے ہیں انہیں 7600 ووٹ حاصل ہوئے ہیں جبکہ بی جے پی کے کوشلیندر پٹیل کو 6363 ووٹ حاصل ہوئے ہیں۔

پھول پور میں سماجوادی پارٹی آگے

تازہ اطلاعات کے مطابق اتر پردیش کی پھول پور لوک سبھا سیٹ سے سماجوادی پارٹی کے امیدوار ناگیندر سنگھ پٹیل کو برتری حاصل ہوئی ہے۔

پھول پور-گورکھ پور میں بی جے پی آگے

  • پھول پور لوک سبھا سیٹ پر بی جے پی امیدوار کوشلیندر سنگھ پٹیل کی معمولی برتری۔
  • گورکھ پور میں ابتدائی رجحانات کے مطابق بی جے پی امیدوار اوپیندر شکلا آگے۔
  • بہار کی ارریہ لوک سبھا سیٹ پر آر جے ڈی کے سرفراز عالم کو سبقت۔
  • بہار کی جہان آباد اسمبلی سیٹ سے آر جے ڈی کے کرشن موہن کو برتری۔
  • بہار کی بھبھوا اسمبلی سیٹ پر بی جے پی کی رنکی رانا پانڈے آگے چل رہی ہیں۔

ریاستی الیکشن آفس ذرائع سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق پھول پور پارلیمانی حلقہ کی ووٹوں کی گنتی’ منڈیر امنڈی‘ میں کی جا رہی ہے۔ ووٹوں کی گنتی کے مقام پر 48 سی سی ٹی وی لگائے گئے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ووٹوں کی گنتی کے لیے ہر اسمبلی کے لئے 14 ٹیبل لگائی گئی ہے۔ ووٹوں کی گنتی کے مقام پر سیکورٹی کے سخت انتظامات ہیں۔
اسٹرانگ روم سے ووٹوں کی گنتی کےٹیبل تک ای وی ایم لے جانے کی بھی ویڈیوگرافی کرائی جا رہی ہے۔
اسی طرح گورکھپور پارلیمانی سیٹ کے حلقہ میں کل پانچ اسمبلی نشستیں ہیں جس کے لئے ووٹوں کی گنتی کے لئے پانچ کیمپ لگائے گئے ہیں۔ ہر کیمپ میں 15 ٹیبل ہیں اور ہر ٹیبل پر چار ملازم تعینات کئے گئے ہیں ۔ گورکھپور حلقہ سے بھارتیہ جنتا پارٹی اور سماج وادی پارٹی سمیت کل 10 امیدواروں نے الیکشن لڑا جبکہ پھول پور سیٹ پر 22 امیدواروں نے انتخابات لڑا۔ دونوں سیٹوں کے انتخابات کے نتائج دوپہر بعد ہی ملنے کا امکان ہے۔
قابل غور ہے کہ گورکھپور پارلیمانی حلقہ سے یوگی آدتیہ ناتھ کو وزیر اعلی اور پھول پور سے کیشو پرساد موریہ کو نائب وزیر اعلی بنائے جانے پر ان کے استعفی دینے سے یہ دونوں نشستیں خالی ہوئی تھیں۔ (یو این آئی)

ضمنی انتخابات کی ووٹ شماری کا عمل شروع

اتر پردیش اور بہار کے ضمنی انتخابتات کی ووٹ شماری کا عمل صبح 8 بجے سے شروع ہو چکا ہے اور تھوڑی دیر میں نتائج کے رجحانات ملنے شروع ہو جائیں گے۔

سب سے زیادہ مقبول