کورونا وائرس: یوپی میں کمیونٹی ٹرانسمیشن کا آغاز، متأثرین کی تعداد 42 پہنچی

اطلاعات کے مطابق نوئیڈا کی 21 سالہ لڑکی کے جسم میں مہلک وائرس کی تصدیق ہوئی ہے جو کبھی بھی بیرون ملک کے سفر پر نہیں گئی ہے۔ جس سے یوپی میں کووڈ۔19 کے کمیونٹی ٹرانسمیشن کے شبہات بڑھ گئے ہیں۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

لکھنؤ: اترپردیش میں جمعرات کو نوئیڈا میں کورونا وائرس کے تین اور باغپت میں ایک نئے مریضوں کی تصدیق کے بعد ریاست میں کووڈ۔19 سے متأثرہ مریضوں کی تعداد بڑھ کر 42 ہوگئی ہے۔ مصدقہ ذرائع نے بتایا کہ تازہ متأثرین ایسے ہیں جن کی بیرون ملک سے آنے کی کوئی تاریخ نہیں ہے۔ جس سے یوپی میں کووڈ۔19 کے کمیونٹی ٹرانسمیشن کے شہبات میں اضافہ ہوگیا ہے۔ حالانکہ ریاست میں ابھی تک 42 کورونا متأثرین میں سے 11 افراد پوری طرح سے صحت یاب ہوکر گھر لوٹ چکے ہیں، جبکہ دیگر چار کو جلد ہی گھر بھیجنے کی تیاری ہے۔

اطلاعات کے مطابق نوئیڈا کی 21 سالہ لڑکی کے جسم میں مہلک وائرس کی تصدیق ہوئی ہے جو کبھی بھی بیرون ملک کے سفر پر نہیں گئی ہے۔ ایسے ہی 33 سالہ ایک دیگر خاتون اور 39 سالہ مرد میں کووڈ۔19 کی تصدیق ہوئی ہے۔ جس سے یوپی میں کووڈ۔19 کے کمیونٹی ٹرانسمیشن کے شبہات بڑھ گئے ہیں۔ اس کے علاوہ دبئی سے لوٹے 32 سالہ شخص میں بھی کورونا وائرس کی مثبت روپورٹ ملی ہے۔

متعلقہ سبھی چار متأثرین کی جانچ لکھنؤ کے کنگ جارج میڈیکل یونیورسٹی میں ہوئی ہے جس کی رپورٹ جمعرات صبح کو آئی ہے۔ سبھی کو ان کے متعلقہ اضلاع میں آئیسولیشن وارڈ میں داخل کرایا گیا ہے۔

میڈیکل افسران کے مطابق ریاست میں اب تک 42 افراد کے نمونوں میں کورونا وائرس کی علامات کی تصدیق ہو چکی ہے جن میں نوئیڈا میں سب سے زیادہ 14 اور آگرہ و لکھنؤ میں آٹھ آٹھ ،غازی آباد میں تین، پیلی بھیت میں دو اور لکھیم پور کھیری، مرادآباد، وارانسی، کانپور، باغپت، جونپور اور شاملی میں ایک ایک شخص میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔