دہلی میں کورونا کا قہر جاری ، کورونا کے ریکارڈ 4308نئے مریض

راجدھانی میں آج نئے معاملے بڑھنے کے ساتھ ہی پابندی شدہ علاقوں کی گنتی میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ پابندی شدہ علاقوں کی تعداد بھی 1226سے بڑً کر 1272پر پہنچ گئی۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

راجدھانی دہلی میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس (کووڈ۔19)کے انفیکشن کے ریکارڈ 4308نئے معاملے سامنے آنے کے ساتھ ہی متاثرین کی مجموعی تعداد جمعرات کی رات 2.05لاکھ کو پار کر گئی لیکن اس کے ساتھ ہی تشویش کی بات یہ ہے کہ مریضوں کے صحت یاب ہونے کی شرح بھی مسلسل گرتی جارہی ہے۔

دہلی حکومت کی وزارت صحت کی طرف سے آج جاری اعدادوشمار کے مطابق کورونا انفیکشن کے چار ہزار سے زیادہ نئے معاملے سامنے آنے سے متاثرین کی تعداد 2,05,482پر پہنچ گئی ہے۔

اس دوران 2637مزید مریضوں کے صحت یاب ہو جانے سے اب تک پونے دو لاکھ سے زیادہ 1,75,400لوگ کورونا وائرس کو شکست دے چکے ہیں۔ اس دوران انفیکشن سے 28لوگوں کی موت ہونے سے اس بیماری سے مرنے والے لوگوں کی تعداد بڑھ کر 4666ہوگئی ہے۔

اس سے پہلے دہلی میں بدھ کو سب سے زیادہ 4039معاملے اور منگل کو 3609نئے معاملے سامنے آئے تھے۔ راجدھانی میں دو مہینہ کے وقفہ کے بعد دو ستمبر کو وائرس کے ڈھائی ہزار سے زیادہ معاملے آئے تھے اور گزشتہ ایک ہفتہ سے ان میں اچھال جاری ہے۔

راجدھانی میں آج نئے معاملے بڑھنے کے ساتھ ہی پابندی شدہ علاقوں کی گنتی میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ پابندی شدہ علاقوں کی تعداد بھی 1226سے بڑً کر 1272پر پہنچ گئی۔

اسی مدت میں ریکارڈ 58ہزار سے زیادہ 58,340نمونوں کی جانچ ہوئی ہے۔ راجدھانی میں فی دس لاکھ پر 1,03,269ٹیسٹ ہوئے ہیں۔ اب تک 19.62لاکھ سے زیادہ نمونوں کی جانچ کی جاچکی ہے۔ راجدھانی میں کورونا کے فعال معاملات 1643سے بڑھ کر 25,416پر پہنچ گئے ہیں ۔ ان میں سے 13,518ہوم آئسولیشن میں ہیں۔

صحت یاب مریضو ں کے مقابلہ میں نئے معاملات کی تعداد زیادہ رہنے سے ریکوری شرح کل کے 85.87فیصد سے کم ہوکر آج 85.36فیصد رہ گئی۔

next