کورونا وبا سے لقمہ اجل بن جانے والوں کے لواحقین کو معاوضہ دیا جائے: غلام احمد میر

جموں و کشمیر کانگریس صدر نے کہا کہ کانگریس کا مطالبہ ہے کہ ایک کورونا اموات کے بارے میں صحیح اعداد و شمار فراہم کئے جائیں اور دوسرا متوفین کے لواحقین کو چار لاکھ روپیے بطور معاوضہ دیئے جائیں۔

غلام احمد میر، تصویر ٹوئٹر@GAMIR_INC
غلام احمد میر، تصویر ٹوئٹر@GAMIR_INC
user

یو این آئی

جموں: جموں وکشمیر پردیش کانگریس کمیٹی نے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا سے اپیل کی ہے کہ وہ یونین ٹریٹری میں کورونا وبا سے لقمہ اجل بن جانے والوں کے لواحقین کو معاوضہ دیں۔ پارٹی کا مطالبہ ہے کہ کورونا سے جس کی موت واقع ہوئی ہے خواہ گھر میں ہوئی یا اسپتال میں ہوئی ہے، کے لواحیقن کو چار لاکھ روپیے معاوضہ دیا جانا چاہئے۔

یہ باتیں کمیٹی کے صدر غلام احمد میر نے ہفتے کے روز یہاں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کے دوران کیں۔ انہوں نے کہا کہ ’کورونا وبا کے دونوں مرحلوں کے دوران ملک میں دنیا بھر کی طرح تباہی مچ گئی لیکن موجودہ سرکار نے اموات کے متعلق صحیح اعداد و شمار فراہم نہیں کئے‘۔ ان کا کہنا تھا کہ ’یہاں صرف اسپتالوں میں ہی لوگوں کی کورونا سے موت واقع نہیں ہوئی بلکہ گھروں میں بھی ہوئی اور راہل گاندھی پہلے لیڈر ہیں جنہوں نے حکومتوں کو اس ضمن میں تیاریاں کرنے کے لئے مطلع کیا‘۔


موصوف صدر نے کہا کہ کانگریس کا مطالبہ ہے کہ ایک کورونا اموات کے بارے میں صحیح اعداد و شمار فراہم کئے جائیں اور دوسرا متوفین کے لواحقین کو چار لاکھ روپیے بطور معاوضہ دیئے جائیں۔ انہوں نے کہا کہ جن ریاستوں میں کانگریس کی سرکار ہے ان میں ریاستی سرکار کی طرف سے لواحیقن کو ایک لاکھ روپیے دیا جائے گا جبکہ باقی تین لاکھ روپیے مرکزی سرکار کو دینے چاہئے۔

غلام احمد میر نے کہا کہ ہماری جموں وکشمیر کے لیفٹیننٹ گورنر سے اپیل ہے کہ وہ یونین ٹریٹری میں کورونا سے مرنے والوں کے لواحیقن کو معاوضہ دیں تاکہ ان کی مدد ہوسکے۔ ان کا کہنا تھا کہ کمیٹی اس ضمن میں لیفٹیننٹ گورنر کے نام ایک مکتوب بھی روانہ کرے گی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔