ایپ پر پابندی کے بعد چین کی نکلی چیخ،چین نے فیصلے کی مخالفت کی

چین کا کہنا ہے کہ ہندوستان کےاس فیصلہ سے ہندوستان میں مقامی لوگوں کے روزگار پر اثر پڑے گا ساتھ ہی صارفین کے مفادات بھی متاثر ہوں گے۔

سوشل میڈیا
سوشل میڈیا
user

یو این آئی

سرحد پر 20 فوجیوں کی شہادت کے بعد ہندوستانی حکومت نے جن59 چینی ایپس کو بندکرنے کا حکم جاری کیا ہے اس کے بعد سے چینی کمپنیوں میں ہڑکمپ مچ گیا ہے اور اب چینی حکومت ہندوستان کے اس فیصلہ کے خلاف آواز بلند کر رہی ہے۔ چین نے اس کے یہاں سے آپریٹ کئےجارہے 59 موبائل ایپ پر ہندوستان کے ذریعہ پابندی لگائے جانے پر اپنی فکرمندی کا اظہار کرتے ہوئے اسے بھیدبھاؤ والا رویہ قرار دیا اور اس کی مخالفت کی۔

چین کے یہاں واقع سفارت خانہ نے آج ایک بیان جاری کرکے کہا ہے کہ ہندوستان کا یہ فیصلہ مشکوک اور عالمی تجارتی تنظیم کے قوانین کی خلاف ورزی ہے۔ اس نے کہاکہ یہ فیصلہ تجارت اور ای کامرس کے عام قوانین کے خلاف ہے۔ یہ ہندوستان میں مقابلہ اور صارفین کے مفادات کے بھی موافق نہیں ہے۔

ریلیز میں کہا گیا ہے کہ جن ایپ پر پابندیاں عائد کی گئیں ہیں ان کا ہندوستان میں بہت بڑی تعدادمیں لوگ استعمال کرتے ہیں اور ان کو آپریٹ کرنے میں سبھی قوانین کی پیروی کی جاتی ہے۔ اس فیصلہ سے ہندوستان میں مقامی لوگوں کے روزگار پر اثر پڑے گا ساتھ ہی صارفین کے مفادات متاثر ہوں گے۔

چین نے اس امید کا اظہار کیا ہے کہ ہندوستان دونوں ممالک کے درمیان معاشی اور تجارتی شعبہ میں باہمی فائدے کودھیان میں رکھے گا۔ چین کی درخواست ہے کہ ہندوستان سبھی سرمایہ کاروں اور سروس فراہم کرنے والوں کے ساتھ یکساں سلوک کرے گا اور دوطرفہ تعلقات کے تحت دونوں ممالک کے بنیادی مفادات کو دھیان میں رکھے گا۔