آئی این ایکس میڈیا معاملے میں ضمانت کےلئے ہائی کورٹ پہنچے چدمبرم

کانگریس کے سینئرلیڈر اور سابق مرکزی وزیر پی چدمبرم نے آئی این ایکس میڈیا بدعنوانی معاملے میں ضمانت کےلئے دہلی ہائی کورٹ میں بدھ کو عرضی دائر کی۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

یو این آئی

نئی دہلی: کانگریس کے سینئرلیڈر اور سابق مرکزی وزیر پی چدمبرم نے آئی این ایکس میڈیا بدعنوانی معاملے میں ضمانت کےلئے دہلی ہائی کورٹ میں بدھ کو عرضی دائر کی۔ چدمبرم فی الحال اس معاملے میں 14دن کی عدالتی حراست میں تہاڑ جیل میں بند ہیں۔مرکزی تحقیقاتی بیورو(سی بی آئی)نے یہ معاملہ درج کیا ہے۔ انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے بھی آئی این ایکس معاملے میں چدمبرم پر منی لانڈرنگ کا معاملہ درج کیاہے۔

سابق مرکزی وزیر نے سی بی آئی کی خصوصی عدالت کے پانچ ستمبر کے اس حکم کوبھی چیلنج کیاہے جس میں انہیں 19ستمبر تک عدالتی حراست میں بھیجا گیا۔

دہلی ہائی کورٹ نے اس معاملے میں سابق مرکزی وزیر کی عبوری ضمانت خاارج کردی تھی۔اس کے بعد سی بی آئی نے 21اگست کو چدمبرم کو گرفتار کرکے 22 اگست کو راؤز ایونیو میں واقع سی بی آئی کے خصوصی جج اجے کمار کہار کی عدالت میں پیش کیاتھا۔پہلے انہیں 26 اگست تک سی بی آئی کی حراست میں بھیجا گیا تھا۔ بعد میں سی بی آئی حراست کی مدت کو کئی بار بڑھایا گیا اور پانچ ستمبر کو انہیں 14دن کےلئے عدالتی حراست میں بھیج دیاگیا۔

آئی این ایکس میڈیا معاملہ305کروڑ روپے کا ہے۔ چدمبرم پر الزام ہے کہ 2007 میں جب وہ ترقی پسند اتحاد حکومت میں وزیر خزانہ تھے،305کروڑ روپے کی غیر ملکی کرنسی حاصل کرنے کے لئے آئی این ایکس گروپ کو غیر ملکی سرمایہ کاری کو فروغ دینے والے بورڈ کی منظوری دئےجانے میں مبینہ طورپر بے ضابطگی برتی گئی۔

سی بی آئی نے 15مئی 2017 کو اس معاملے میں ایف آئی آر درج کی تھی جبکہ انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ نے گزشتہ سال منی لانڈرنگ کا معاملہ درج کیا تھا۔