چنئی: دیوالی پر آتش بازی کے بعد 22 ہزار کلو کچرا صاف کیا جائے گا!

کارپوریشن نے دیوالی کے تہوار کے دوران جمع ہونے والے کوڑے کے تصفیہ کے لئے 9 لاری اور 10 بیٹری سے چلنے والی گاڑیوں (بی او وی) کا انتظام کیا ہے۔

ُپٹاخوں کی بکری / یو این آئی
ُپٹاخوں کی بکری / یو این آئی
user

قومی آوازبیورو

چنئی: گریٹر چنئی کارپوریشن (جی سی سی) نے امید ظاہر کی ہے کہ دیوالی کے تہوار پر ہونے والی آتش بازی کے بعد تقریباً 22 ٹن (22 ہزار کلو) کوڑا کرکٹ جمع کیا جائے گا۔ کارپوریشن نے دیوالی کے تہوار کے دوران جمع ہونے والے کچرے کے تصفیہ کے لئے 9 لاری اور 10 بیٹری سے چلنے والی گاڑیوں (بی او وی) کا انتظام کیا ہے۔

چنئی کارپوریشن کے افسران نے آئی اے این ایس کو بتایا کہ کارپوریشن 2 اکتوبر سے ضروری صفائی اور کوڑے کو ہٹانے کے لئے بیداری پیدا کر رہا ہے۔ جی سی سی نے تمام وارڈوں میں صاف اور سبز دیوالی کی ضرورت پر پمفلٹ تقسیم کیے ہیں اور لوگوں کو کوڑے کے تصفیہ کے بارے میں آگاہ کیا ہے۔


آئی اے این ایس سے بات کرتے ہوئے کارپوریشن کے ایک سینئر عہدیدار نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ رہائشی پٹاخوں کے کوڑے کو گھر کے کوڑے سے الگ کر کے اسے کنزرویشن ورکرز کے حوالے کریں۔ کوڑا اٹھانے کے لیے ہر وارڈ میں دو گاڑیاں استعمال کی جائیں گی۔

وارڈوں سے کچرا اکٹھا کر کے کارپوریشن کی گومڈی پونڈی سہولت میں لے جایا جائے گا۔ کارپوریشن حکام کے مطابق تمام وارڈز میں آگ بجھانے کے آلات اور دیگر تمام ہنگامی آلات تیار ہیں۔ تہواروں کے دوران کسی بھی ہنگامی صورتحال کے لیے کارپوریشن کی کوڈنگائیور اور پیرنگوڈی سہولیات پر پانی کی لاریاں بھی تعینات کی گئی ہیں اور صرف سبز پٹاخے چلائے جانے کے ساتھ کارپوریشن کو توقع ہے کہ آلودگی کی سطح میں کمی آئے گی۔


خیال رہے کہ تمل ناڈو میں صبح 6 بجے سے شام 7 بجے کے درمیان پٹاخے چلانے پر پابندی ہے۔ رات 8 بجے تک لوگ اسے سنجیدگی سے نہیں لے رہے ہیں اور بدھ کو دن بھر پٹاخے چلائے جاتے رہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔