جامعہ ملیہ اسلامیہ کی صد سالہ تقریبات، سہ روزہ بین الاقوامی کانفرنس کا افتتاح

کانفرنس کے کو چییرمین، سنٹر فار ڈسٹنس جامعہ کے ڈائریکٹر پروفیسر احرار حسین نے کہا کہ اس سہ روزہ کانفرنس میں کل سے دو روز میں تمام سیشنوں میں 800 سے زیادہ مقالات پیش کیےجاییں گے۔

جامعہ ملیہ اسلامیہ
جامعہ ملیہ اسلامیہ
user

قومی آوازبیورو

نیی دہلی: جامعہ اساتذہ کی انجمن کی جانب سے جامعہ ملیہ اسلامیہ کی صد سالہ تقریبات کے سلسلے میں منعقدہ سہ روزہ بین الاقوامی کانفرنس کا آج افتتاح عمل میں آیا۔ پروفیسر (لارڈ) بھکھیو پاریک، جو برطانوی سیاسی اسکالر اور پدم بھوشن ایوارڈی ہیں، افتتاحی تقریب کے مہمان خصوصی کی حیثیت سے شرکت کی، صدارت پروفیسر نجمہ اختر، وائس چانسلر، جامعہ نے کی۔ تقریب میں انوپ گپتا، چیف جنرل منیجر، گیل انڈیا لمیٹڈ اور اشوک کمار گپتا، وائس چیئرمین اور سی ای او، شالیمار پینٹس نے بطور مہمان اعزازی شرکت کی۔

وائس چانسلر پروفیسر نجمہ اختر نے کہا کہ اس سہ روزہ کانفرنس میں دنیا کے مختلف شعبوں اور مضامین کے اسکالرز شریک ہو رہے ہیں تاکہ وہ قوم کے وژن کو حاصل کرنے کے لئے اپنے جدید نظریات اور تحقیق کو پیش کریں۔ کانفرنس کے چیئرمین اور جے ٹی اے کے سکریٹری پروفیسر ماجد جمیل نے کہا کہ اس بین الاقوامی کانفرنس کے ذریعے ہم یونیورسٹی کے بانیوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں اور انہیں عظیم جدوجہد کرنے والے اور وژنری کی حیثیت سے یاد کرتے ہیں۔

کانفرنس کے کو چییرمین، سنٹر فار ڈسٹنس جامعہ کے ڈائریکٹر پروفیسر احرار حسین نے کہا کہ اس سہ روزہ کانفرنس میں کل سے دو روز میں تمام سیشنوں میں 800 سے زیادہ مقالات پیش کیےجاییں گے۔ چار عمومی سیشنوں میں مختلف موضوعات پر 20 ممتاز مقررین اور مدوعین کی گفتگو ہوگی، جامعہ ملیہ اسلامیہ کے بانی، مہاتما گاندھی، ان کی میراث، شہریت اور ہندوستانی آئین: حقوق اور فرائض پر خاص سیشن شامل ہے۔

اس موقع پر ثقافتی پروگرام بھی افتتاح عمل میں آیا اس کے تحت: ایک شمع شہیدوں کے نام اور سفیانہ قوالی پیش کی گئی۔ جامعہ کے تقریباً 800 اساتذہ اور 100 سے زیادہ رضاکاروں کی حمایت، وژن اور محنت کے ذریعہ کارفرما ہے، پیر 17 فروری یعنی کل کے جامعہ ملیہ اسلامیہ کے بانیان سے متعلق خصوصی اجلاس اجلاس کے سید شاہد مہدی، سابق وائس چانسلر، جامعہ، چیئرپرسن ہوں گے، پروفیسر الیاس حسین، پی وی سی، مہمان خصوصی ہوں گے اور ڈاکٹر شاہد جمیل، سی ای او، ویلکم۔ ٹرسٹ یو کے۔ ڈی بی ٹی انڈیا الائنس مہمان خصوصی ہوں گے۔ جامعہ کے سابق وائس چانسلر نجیب جنگ مہمان خصوصی ہوں گے اور گاندھی اسمرتی اور درشن اسمرتی کے معروف ممبر جناب لکشمی داس ایک خصوصی سیشن، مہاتما گاندھی اور ان کی وراثت پر ایک اہم خطبہ پیش کریں گے۔

شہریت اور ہندوستانی آئین کے بارے میں ایک اجلاس، حقوق اور فرائض: مقررین پروفیسر زویا حسن، پروفیسر ایمریٹا، جواہر لال نہرو یونیورسٹی، پروفیسر جیوتی گھوش، جواہر لال نہرو یونیورسٹی کے مرکز برائے اقتصادی، جناب سرینواسن جین، سینئر صحافی، این ڈی ٹی وی، ڈاکٹر کولن گونسلز، بانی، ہیومن رائٹس لاء نیٹ ورک، ہرش مندر، ڈائریکٹر، سینٹر فار ایکویٹی اسٹڈیز، نئی دہلی، پروفیسر نندیتا نارائن، سینٹ اسٹیفنس کالج، دہلی یونیورسٹی، سابق صدر ایف ای ڈی سی ٹی اے شریک ہوں گے، آج کے افتتاحی تقریب میں کثیر تعداد میں لوگوں نے شرکت کی۔

next