نہر میں ڈوبی بچی کی لاش چارروز کے بعد ملی

12 ستمبر کو شکتی نہر میں ایک خاتون اپنے تین بچوں سمیت نہر میں چھلانگ لگا دی تھی۔ جس میں ایک بچی کی لاش اسی روز برآمد کرلی گئی تھی اور دو بچے لاپتہ تھے۔

علامتی فائل تصویر یو این آئی
علامتی فائل تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

اتراکھنڈ کے ضلع دہرادون میں ایک خاتون نے اپنے تین بچوں کے ساتھ نہر میں چھلانگ لگا کر خودکشی کی کوشش کی ۔ اب ڈوبے بچوں میں سے تیسری بچی کی لاش چار دن کے بعد برآمد ہوئی۔ اسٹیٹ ڈیزاسٹر رسپانس فورس (ایس ڈی آر ایف) کی ترجمان انسپکٹر للیتا نیگی نے بتایا کہ 12 ستمبر کو وکاس نگرتھانہ کے تحت، شکتی نہر میں ایک خاتون اپنے تین بچوں سمیت نہر میں چھلانگ لگا دی تھی۔ جس میں ایک بچی کی لاش اسی روز برآمد کرلی گئی تھی اور دو بچے لاپتہ تھے۔

انہوں نے بتایا کہ لاپتہ بچوں میں سے ایک بچے کی لاش 13 ستمبر کو ایس ڈی آر ایف نے برآمد کی تھی۔ جبکہ دوسرے لاپتہ کی تلاش میں جوان مسلسل شکتی نہر کی خاک چھان رہے تھے۔


محترمہ نیگی نے بتایا کہ ایس ڈی آر ایف کے گہرے غوطہ خور کے ذریعہ بھی نہر کی تہہ تک جاکر گہری تلاشی لی۔ ان مسلسل کوششوں کی وجہ سے آج ڈھکرانی پل کے قریب زینب بیٹی شہزاد، ساکن حسن پور، تھانہ سہسپور کی لاش برآمد کرکے ضلع پولیس کے حوالے کردی گئی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔