بی جے پی خوف، نفرت اور تفرقہ پھیلانے کی سیاست کر رہی ہے: آدتیہ ٹھاکرے

ریاستی حکومت کے خلاف بی جے پی کی جانب سے چلائی جارہی مہاراشٹرا بچاو مہم کا جواب دیتے ہوئے وزیر ماحولیات اور شیو سینا لیڈر ادتیہ ٹھاکرے نے بی جے کو خوف، نفرت اور تفرقہ کی سیاست کرنے والے پارٹی قرار دیا

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

ممبئی : ریاستی حکومت کے خلاف بی جے پی کی جانب سے چلائی جارہی"مہاراشٹرا بچاو" مہم کا جواب دیتے ہوئے وزیر ماحولیات اور شیو سینا لیڈر آدتیہ ٹھاکرے نے بی جے کو خوف، نفرت اور تفرقہ کی سیاست کرنے والے پارٹی قرار دیا۔

انھوں نے اپنے ایک ٹوئٹ میں کہا کہ " ایک سیاسی جماعت کی ریاستی اکائی نے ایک نیا اور نچلے درجے کا عالمی ریکارڈ قائم کیا ہے۔ اس وبائی مرض کے دوران جب دنیا سب کچھ بھول کر ایک دوسرے کی مدد کرنے میں جٹی ہے، یہ دنیا کی واحد جماعت ہےجو سیاست کی خاطر خوف ، نفرت اور تفرقہ پھیلانے میں ملوث ہے ۔ یہ جماعت وبائی مرض کو بھول گئی ہے"۔

اس مہم کے دوران چھوٹے بچوں کو دھوپ میں کھڑے کر کے انکے سیاسی مقاصد کے استعمال کو انھوں نے اسے انتہائی شرمناک قرار دیتے ہوئے کہا کہ اقتدار کی ہوس سیاست دانوں سےکیا کچھ کراتی ہے۔ یہ کورونا کو بھول گئے سیاست پیاری ہے " بالکل شرمناک ، سیاست اور اقتدار کی ہوس قائدین کو کیا کرا سکتی ہے۔ بچوں کو گرمی میں کھڑا کرنا ، چہروں پر ان کے ماسک برابر نہیں ہیں، نیچے کیے ہوئے ہیں ، سیاسی احتجاج کے لئے چہرہ ڈھانکے بغیر ان بچوں کا استعمال ، جب کہ ان کو گھروں کے اندر محفوظ رکھنے کی ضرورت ہے۔ کورونا کو بھُول گئے ، سیاست پیاری ہے۔"

بی جے پی نے آج مہاراشٹرا میں مہاوکاس اگھاڑی حکومت کے خلاف " مہاراشٹرا بچاو" مہم شروع کی ہے ۔ اور ممبئی میں بی جے پی دفتر کے سامنے حسب اختلاف کے قائد اورسابق وزیر اعلیٰ دیویندر فڑنوس، ونود تاؤڑے وغیرہ نے اس میں شامل تھے۔اس موقع پر موجود حاضرین سے خطاب کرتے ہوئے ٰ دیویندر فڑنوس نے ریاستی حکومت پرزبردست تنقید کی جس پر مہاوکاس اگھاڑی کی جانب سے انھیں تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔

دیویندر فڑنوس نے کہا تھا کہ کورونا وبا کے دوران کرناٹک گجرات، مدھیہ پردیش اور چھتیس گڑھ حکومتوں کی جانب سے اقتصادی پیکیج دیے گئے۔ لیکن مہاراشٹرا حکومت ، مرکزی مددکے علاوہ ایک بھی روپیہ خرچ کرنے تیار نہیں ہے۔مرکزی حکومت نے 468 کروڑ کی مدد دی۔ اس کے علاوہ 1600 کروڑ روپیے مزدوروں کو انکے گاوں پینچانےکے لیے دیے گئے۔ لیکن ریاستی حکومت اپنی طرف سے ایک روپیہ کا بھی کوئی اعلان نہیں کیا۔

فڑنوس کی جانب سے کی گئی اس تنقید کے بعد اسکے جواب میں آدتیہ ٹھاکرے نے اسے شرمناک قرار دیتے ہوئے کہا کہ بی جے پی خوف، نفرت اور تفرقہ پھیلانے کی سیاست کر رہی ہے۔

    Published: 22 May 2020, 10:40 PM