بہار: ایل جے پی ریاستی صدر کی تیجسوی یادو سے ملاقات، چہ می گوئیاں شروع!

بہار اسمبلی انتخاب میں این ڈی اے سے علیحدہ ہونے والی ایل جے پی کے ریاستی صدر اور رکن پارلیمنٹ پرنس راج نے منگل کو آر جے ڈی لیڈر تیجسوی یادو سے ملاقات کی جس کے بعد سیاسی ماحول کافی گرم ہو گیا ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

تنویر

بہار میں اسمبلی انتخاب کے پیش نظر سیاسی سرگرمیاں تیز ہیں۔ ایک طرف جہاں پرانی پارٹی چھوڑ کر نئی پارٹی جوائن کرنے کا سلسلہ جاری ہے، تو دوسری طرف الگ الگ پارٹیوں کے لیڈران کی ملاقات کا سلسلہ بھی رواں دواں ہے تاکہ انتخابی نتیجہ برآمد ہونے کے بعد ضرورت پڑنے پر تال میل قائم کیا جا سکے۔ اس درمیان ایک بڑی سیاسی ہلچل آر جے ڈی اور ایل جے پی کے سرکردہ لیڈروں کی ملاقات کے بعد دیکھنے کو مل رہی ہے۔

دراصل بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار سے تلخیوں کے سبب ایل جے پی نے ریاست میں این ڈی اے کا دامن تو کچھ دن پہلے چھوڑ ہی دیا تھا اور تنہا انتخابی میدان میں اترنے کا فیصلہ کر لیا تھا، اب پارٹی کے ریاستی صدر اور رکن پارلیمنٹ پرنس راج نے سابق وزیر اعلیٰ رابڑی دیوی کی رہائش پر پہنچ کر ان سے اور آر جے ڈی لیڈر تیجسوی پرساد سے ملاقات کر کے ایک نیا سیاسی طوفان کھڑا کر دیا ہے۔ اس ملاقات کے بعد کئی طرح کی قیاس آرائیاں ہو رہی ہیں۔ پرنس راج منگل کی صبح رابڑی دیوی کی رہائش پر پہنچے اور بتایا جاتا ہے کہ تنہائی میں تیجسوی سے ملاقات کی۔

جب پرنس راج رابڑی دیوی کی رہائش سے باہر نکلے تو میڈیا والوں نے ان سے سوال کیا جس پر انھوں نے کہا کہ یہ ملاقات سیاسی نہیں بلکہ دوستانہ تھی۔ پرنس راج نے میڈیا کو بتایا کہ "میں اپنے بڑے پاپا مرحوم رام ولاس پاسوان کے 'شردھانجلی سبھا' میں شامل ہونے کو لے کر دعوت دینے رابڑی دیوی کے گھر آیا تھا۔ رابڑی دیوی اور تیجسوی یادو سے ملاقات ہوئی ہے۔ اسے سیاست سے جوڑنا مناسب نہیں ہے۔" انھوں نے مزید کہا کہ "آنجہانی لیڈر پاسوان کا سبھی لیڈروں سے رابطہ تھا۔ کئی لوگوں سے ذاتی طور پر جا کر پروگرام میں شامل ہونے کی دعوت دے رہا ہوں۔"

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔