بنگال بی جے پی صدر دلیپ گھوش نے پھر دیا متنازعہ بیان، ’ماؤں‘ کو دی کھلی دھمکی

دلیپ گھوش نے ایک ریلی کے درمیان متنازعہ بیان دیتے ہوئے کہا کہ ’’اگر الیکشن کے بعد اپنے بچوں کا چہرہ دیکھنا چاہتی ہیں تو ماں انھیں کنٹرول میں رکھیں۔‘‘

دلیپ گھوش، تصویر فیس بک
دلیپ گھوش، تصویر فیس بک
user

تنویر

مغربی بنگال میں اسمبلی انتخابات سے قبل زبانی جنگ انتہائی تیز ہو گئی ہے۔ خصوصاً بی جے پی اور ترنمول کانگریس لیڈران ایک دوسرے کے خلاف زہر اگلتے ہوئے نظر آ رہے ہیں۔ انتخابی تشہیر اور ریلیوں کے درمیان کبھی قابل اعتراض بیانات دیے جا رہے ہیں، تو کبھی دھمکی آمیز لہجہ بھی اختیار کیا جا رہا ہے۔ اس درمیان اپنے متنازعہ بیانات کے لیے مشہور بی جے پی سربراہ دلیپ گھوش نے ایک بار پھر متنازعہ بیان دے کر سیاسی گرمی بڑھا دی ہے۔ انھوں نے ایک ریلی کے دوران کہا کہ ’’ہمارے مخالفین ہمیں بتا رہے ہیں کہ ہمارا کھیل ختم ہو گیا ہے۔ لیکن میں انھیں بتا دوں کہ ہمارا کھیل جاری ہے۔ تیار رہو... اگر الیکشن کے بعد وہ اپنا چہرہ دیکھنا چاہتے ہیں تو ماؤں کو بولو کہ اپنے بچوں کو کنٹرول میں رکھیں۔ ہم مہذب ہیں اور قانون پر عمل کرتے ہیں، لیکن اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ ہم کمزور ہیں۔‘‘

ریلی سے خطاب کرتے ہوئے دلیپ گھوش نے یہ بھی کہا کہ ’’ہاں، کھیلا ہوب، کھیلا ہوب اور پریبرتن ہوب۔ ممتا دیدی کے بھائیوں کو بتا دوں کہ اس بار ریاست میں بی جے پی ہی حکومت بنائے گی۔ مجھے پتہ ہے کہ یاترا روکنے کی کوششیں ہوں گی، اس لیے میں آپ سے ملنے آیا ہوں۔ ہم یقینی کریں گے کہ آپ اپنے ووٹ ڈالنے میں کامیاب ہوں۔‘‘


واضح رہے کہ مغربی بنگال میں روزانہ بی جے پی لیڈران اور ترنمول کانگریس لیڈران کے ذریعہ کوئی نہ کوئی ایسا بیان دیا جا رہا ہے جس پر سیاسی وبال پیدا ہو رہا ہے۔ ’جے شری رام‘ کے نام پر اور ’دیوی درگا‘ کی بے عزتی کے نام پر بھی خوب سیاست ہو رہی ہے۔ ایک طرف جے پی نڈا اور امت شاہ جیسے بی جے پی کے سرکردہ لیڈران ممتا بنرجی کو تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں، تو دوسری طرف ریاست کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی بی جے پی لیڈروں کو جھوٹا اور فریبی ٹھہرانے کا کوئی موقع نہیں جانے دے رہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔