اعظم خان اور ان کی اہلیہ تزئیں فاطمہ کو جیل میں فراہم کرائی گئیں دوائیں

ضلع مجسٹریٹ نے رام پور کے چیف میڈکل افسر سے اس معاملے میں تعاون کرنے کو کہا جس کے کے بعد ان دونوں افراد کی دوائیں سیتا پور جیل پہنچا دی گئیں۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

لکھنؤ: سماجوادی پارٹی کے سینئر لیڈر اور رام پور سے پارٹی کے رکن پارلیمان محمد اعظم خاں اور ان کی اہلیہ تزین فاطمہ ایم ایل اے کو ان کی دوائیں سیتا پور جیل بھیج دی گئی ہیں۔

اعظم خاں اور ان کی اہلیہ تزین فاطمہ کے ساتھ ان کے بیٹے عبد اللہ اعظم بھی جیل میں قید ہیں جہاں ان کو عدالت کے ایک حکم کے بعد رکھا گیا ہے۔ اعظم خان ان کی اہلیہ تزئین فاطمہ اور ان کے بیٹے عبداللہ اعظم پر دھوکہ دھڑی کا ایک معاملہ زیر غور ہے، جو ان کے بیٹے عبد اللہ اعظم کی پیدائش کی سند سے متعلق ہے۔ ان سب پر الزام یہ ہے کہ ان لوگوں نے عبد اللہ اعظم کی ولادت کی تاریخوں کو دو مختلف اسناد سے ثابت کرنے کی کوشش کی اور الگ الگ سرٹیفیکٹ حاصل کیے۔

ذرائع کے مطابق اعظم خاں اور ان کی اہلیہ تزئین فاطمہ کا رام پور میں ہومیوپیتھک ڈاکٹر سے علاج چل رہا ہے، خبروں کے مطابق ان کی دوائیں جیل میں ختم ہوگئیں جس کے سبب ان کو دشواریوں کا سامنا کرنا پڑا۔ چونکہ ملک میں لاک ڈاؤن چل رہا ہے اس لئے ان لوگوں سے کسی کی ملاقات سیتا پور جیل میں نہیں ہو سکی ہے۔

اس سلسلے میں رام پور سماجوادی پارٹی کے ضلع صدر نے ضلع مجسٹریٹ سے اپیل کی تھی کہ اعظم خان اور ان کی اہلیہ کی دوائیں سیتاپور جیل میں مہیا کروائی جائیں۔ ضلع مجسٹریٹ نے رام پور کے چیف میڈکل افسر سے اس معاملے میں تعاون کرنے کو کہا جس کے کے بعد ان دونوں افراد کی دوائیں سیتا پور جیل پہنچا دی گئیں۔