چھٹھ پوجا: کیجریوال نے لیفٹننٹ گورنر کو لکھا خط، پوجا کی اجازت دینے کا مطالبہ

دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے لیفٹیننٹ گورنر انل بیجل سے دہلی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کے ساتھ میٹنگ بلانے اور آئندہ تہوار کے لیے انتظام کرنے کی گزارش کی ہے۔

اروند کیجریوال، تصویر یو این آئی
اروند کیجریوال، تصویر یو این آئی
user

قومی آوازبیورو

دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے جمعرات کو لیفٹیننٹ گورنر انل بیجل کو خط لکھ کر قومی راجدھانی دہلی میں کووڈ-19 پروٹوکول پر سختی سے عمل کرتے ہوئے چھٹھ پوجا تقریب کی اجازت دینے کا مطالبہ کیا ہے۔ وزیر اعلیٰ نے خط میں لکھا ہے کہ ’’دہلی میں گزشتہ تین مہینوں سے کووڈ کے معاملے کنٹرول میں ہیں۔ مجھے لگتا ہے کہ ہمیں چھٹھ پوجا تقریب کو کووڈ-19 ضابطوں پر عمل کرتے ہوئے اجازت دینی چاہیے۔‘‘

اروند کیجریوال نے کہا کہ پڑوسی ریاستوں اتر پردیش، ہریانہ اور راجستھان نے بھی محفوظ طریقے سے تہوار منانے کا راستہ اختیار کیا ہے۔ کیجریوال نے بیجل سے دہلی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (ڈی ڈی ایم اے) کے ساتھ میٹنگ بلانے اور آئندہ تہوار کا انتظام کرنے کی گزارش کی ہے۔


دہلی حکومت کے فیصلے کے خلاف بی جے پی لگاتار حکومت کی تنقید کر رہی ہے۔ اسی کو لے کر دہلی اور مرکز دونوں سرکاروں کے درمیان خطوط کی جنگ شروع ہو گئی ہے اور کیجریوال کی سول لائنس رہائش کے باہر ایک مظاہرہ بھی ہوا تھا جہاں منوج تیواری کو پانی کی بوچھار کی وجہ سے چوٹ لگ گئی تھی، اور پھر انھیں صفدر جنگ اسپتال میں داخل کرانا پڑا تھا۔

یہ سیاسی جنگ ڈی ڈی ایم اے کے ستمبر کے حکم کے بعد شروع ہوئی ہے، جس میں انھوں نے تہوار کو وبا کے سبب گھروں میں کم اہمیت کے ساتھ منانے کی ہدایت دی تھی۔ اس سے قبل تیواری نے کہا تھا کہ وہ بہار، جھارکھنڈ اور اتر پردیش کے ساتھ ساتھ اتراکھنڈ کے کچھ حصوں میں سب سے مقبول تہوار منانے کے ڈی ڈی ایم اے کے حکم کی خلاف ورزی کریں گے۔


اس درمیان عآپ نے اس ایشو پر سیاست کرنے کے لیے بھگوا پارٹی کے لیڈر کی مذمت کرتے ہوئے کہا تھا کہ ’’لوگوں کی صحت اور زندگی ہمارے لیے سب سے اہم ہے۔ ہمیں افسوس ہے کہ بی جے پی اس پر گندی سیاست کر رہی ہے۔ بی جے پی کو لوگوں کی جان سے کوئی مطلب نہیں ہے۔‘‘ واضح رہے کہ چھٹھ پوجا اس سال 10 نومبر کو ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔