پلوامہ میں مسلح تصادم: لشکر طیبہ کے اعلیٰ کمانڈر لمبو سمیت 2 جنگجو ہلاک

جنوبی ضلع پلوامہ کے داچھی گام جنگلی علاقے میں ایک مسلح تصادم کے دوران سکیورٹی فورسز نے لشکر طیبہ کے اعلیٰ پاکستانی کمانڈر لمبو سمیت دو جنگجوؤں کو ہلاک کر دیا ہے

کشمیر میں تصادم کی فائل تصویر / یو این آئی
کشمیر میں تصادم کی فائل تصویر / یو این آئی
user

یو این آئی

سری نگر: جنوبی ضلع پلوامہ کے داچھی گام جنگلی علاقے میں ایک مسلح تصادم کے دوران سکیورٹی فورسز نے لشکر طیبہ کے اعلیٰ پاکستانی کمانڈر لمبو سمیت دو جنگجوؤں کو ہلاک کر دیا ہے۔

کشمیر زون پولیس نے اس تصادم کے متعلق ایک ٹویٹ میں کہا: ’پلوامہ کے داچھی گام جنگلی علاقے میں آج کے تصادم میں کالعدم تنظیم لشکر طیبہ کے اعلیٰ پاکستانی کمانڈر لمبو کو مارا گیا دوسرے مہلوک جنگجو کی شناخت معلوم کی جا رہی ہے، فوج اور اونتی پورہ پولیس کو مبارک باد‘۔

قبل ازیں سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ضلع پلوامہ کے داچھی گام جنگلی علاقے میں جنگجوئوں کی موجودگی سے متعلق خفیہ اطلاع ملنے پر جموں و کشمیر پولیس، فوج کی راشٹریہ رائفلز اور سی آر پی ایف نے ہفتہ کی علی الصبح مذکورہ علاقے کو محاصرے میں لے کر تلاشی آپریشن شروع کیا۔


انہوں نے بتایا کہ ایک مشتبہ جگہ کی جانب پیش قدمی کے دوران وہاں موجود جنگجوئوں نے سکیورٹی فورسز پر فائرنگ کی جس کے بعد طرفین کے درمیان باضابطہ طور تصادم شروع ہوا۔ سرکاری ذرائع نے بتایا کہ محاصرے میں پھنسنے والے جنگجوئوں کو خودسپردگی اختیار کرنے کی پیشکش کی گئی جو انہوں نے مسترد کی۔ انہوں نے مزید بتایا کہ آخری اطلاعات ملنے تک مسلح تصادم میں دو جنگجوئوں کو مارا جا چکا تھا جن کی لاشیں برآمد کی گئی ہیں۔

دریں اثنا سری نگر میں قائم فوج کی پندرہویں کور (چنار کور) نے اپنے ایک ٹویٹ میں اس تصادم کے بارے میں ایک ٹویٹ میں کہا کہ پولیس کو موصولہ اطلاع پر ہانگل مرگ داچھی گام پلوامہ میں ہفتے کی صبح ایک ایک مشترکہ آپریشن شروع کیا گیا۔ ٹویٹ میں کہا گیا کہ آپریشن کے دوران سیکورٹی فورسز اور جنگجوں کا آمنا سامنا ہوا جس کے نتیجے میں دو جنگجو مارے گئے جن کی تحویل سے ایک اے کے 47 رائفل اور ایک ایم 4 رائفل بر آمد کی گئی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔