مہلوک انکت شرما کے بھائی نے دیا حیرت انگیز بیان، حملہ آور لگا رہے تھے ’جے شری رام‘ کا نعرہ!

’دی وال اسٹریٹ جرنل‘ کی رپورٹ کے مطابق انکور شرما نے ایک ٹیلی فون انٹرویو میں کہا کہ وہ پتھر، چھڑ، چاقو اور تلواروں سے لیس ہو کر آئے تھے۔ وہ زور زور سے ’جے شری رام‘ کے نعرے لگا رہے تھے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

شمال مشرقی دہلی میں ہوئے پرتشدد واقعات میں اب تک 42 افراد کی ہلاکت کی خبریں سامنے آ چکی ہیں، اور اس میں خفیہ بیورو کے افسر انکت شرما کا نام بھی شامل ہے۔ انکت شرما کی موت کے تعلق سے کافی ہنگامہ برپا ہے اور اب تک کئی طرح کی باتیں سامنے آ چکی ہیں۔ ایک نیا انکشاف ’دی وال اسٹریٹ جرنل‘ کی رپورٹ نے کیا ہے جس میں انکت شرما کے بھائی انکور شرما کے حوالے سے کچھ ایسی باتیں لکھی گئی ہیں جو حیران و ششدر کرنے والی ہیں۔

انکور شرما نے انکشاف کیا ہے کہ جن لوگوں نے انکت شرما کو مارا ہے وہ ’جے شری رام‘ کے نعرہ لگا رہے تھے اور ان کے ہاتھوں میں تلواریں تھیں۔ ’دی وال اسٹریٹ جرنل‘ کی رپورٹ کے مطابق انکت کے بھائی نے بتایا کہ وہ گھر لوٹ رہا تھا جب فسادیوں کے ایک گروپ نے پتھر پھینکنا شروع کر دیا اور اسے پاس کی گلی میں لے گئے۔

رپورٹ کے مطابق انکور شرما نے ایک ٹیلی فون انٹرویو میں کہا کہ ’’وہ پتھر، چھڑ، چاقو اور تلواروں سے لیس ہو کر آئے تھے۔ وہ زور زور سے ’جے شری رام‘ کے نعرے لگا رہے تھے۔ کچھ نے ہیلمٹ بھی پہن رکھا تھا۔‘‘ انکور نے مزید بتایا کہ ’’جو لوگ انکت کی مدد کرنے کے لیے سامنے آئے ان پر فسادیوں نے پتھر اور اینٹ پھینکنا شروع کر دیا۔‘‘ اگلے دن انکت کی لاش ایک نالے میں ملی تھی۔ قابل غور ہے کہ اب تک انکت شرما کے اہل خانہ عآپ لیڈر اور کونسلر طاہر حسین پر قتل کا الزام لگاتے رہے ہیں۔ طاہر حسین کے خلاف ایف آئی آر بھی درج ہو گئی ہے۔

فورنسک سائنس لیباریٹری (ایف ایس ایل) کی ایک ٹیم نے جمعہ کی صبح چاند باغ میں عآپ کونسلر کے گھر کا جائزہ لیا تھا۔ ایف ایس ایل ٹیم نے گھر سے ثبوتوں کے نمونے اور ٹکڑے جمع کیے۔ ملزم کےچھت پر پٹرول بم، اینٹ اور پتھر پائے گئے ہیں۔ طاہر حسین کے خلاف دیال پور پولس اسٹیشن میں قتل، ثبوت ختم کرنے اور اغوا کے الزامات کے تحت ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔