’جان گنوانے والے کسانوں کو سماجوادی پارٹی حکومت بننے پر 25 لاکھ روپئے ملیں گے‘، اکھلیش کا اعلان

اکھلیش یادو نے بدھ کے روز یہ بھی اعلان کیا کہ اترپردیش اسمبلی انتخابات کے بعد ایس پی کی حکومت بننے پر تحریک کے دوران جان گنوانے والے کسانوں کو شہید کا درجہ دیا جائے گا۔

اکھلیش یادو، تصویر یو این آئی
اکھلیش یادو، تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

لکھنؤ: سماج وادی پارٹی(ایس پی) سربراہ اکھلیش یادو نے کسان تحریک کے دوران جان گنوانے والے کسانوں کے اہل خانہ کو اترپردیش میں ایس پی حکومت بننے پر 25 لاکھ روپئے بطور 'کسان شہادت سمان' رقم دینے کا اعلان کیا ہے۔

اکھلیش نے بدھ کو بڑا اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ اترپردیش اسمبلی انتخابات کے بعد ایس پی کی حکومت بننے پر تحریک کے دوران جان گنوانے والے کسانوں کو شہید کا درجہ دیا جائے گا۔ انہوں نے ٹوئٹ کر کے بتایا کہ 'کسان کی جان انمول ہے کیونکہ وہ دوسروں کی زندگی کے لئے اناج اگاتا ہے۔ ہم وعدہ کرتے ہیں کہ سال 2022 میں سماج وادی پارٹی کی حکومت بننے پر کسان تحریک میں شہید ہوئے کسانوں کو 25 لاکھ روپئے بطور 'کسان شہادت سمان رقم' کے طور پر دی جائے گی۔


قابل ذکر ہے کہ مرکزی حکومت کے ذریعہ پارلیمنٹ سے پاس کئے گئے تین زرعی قوانین کے خلاف ایک سال سے جاری کسان تحریک کے دوران 700 سے زیادہ کسانوں کی مختلف وجوہات سے موت ہوگئی۔ حال ہی میں وزیر اعظم نریندر مودی نے تینوں زرعی قوانین واپس لینے کا اعلان کرتے ہوئے کسانوں سے تحرک ختم کرنے کی اپیل کی تھی۔ اس کے بعد کسان لیڈر راکیش ٹکیٹ نے تحریک میں مارے گئے کسانوں کی شہادت کا درجہ دینے، اہل خانہ کو معاوضہ دینے اور کسانوں کے خلاف درج مقدمے واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔