موثر قدم اٹھانے کی ضرورت ہے، نہیں تو ہو سکتی ہے مشکل، گلیریا

کورونا کے تازہ معاملوں میں معمولی اضافہ نظر آ رہا ہے اور یہ تشویش کی بات ہے ۔ ایمس کے ڈاریکٹر نے کہا ہے کہ اگر موثر قدم نہیں اٹھائے تو پیدا ہو سکتی ہے مشکل۔

فائل تصویر آئی اے این ایس
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

دہلی سمیت کئی ریاستوں میں کورونا کے تازہ معاملوں میں اضافہ کا رجحان نظر آ رہا ہے اور اس کو لے کر حکومت کی فکر بڑھ گئی ہے۔ کیرالہ میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں کورونا کے بیس ہزار سے زیادہ نئے معاملہ سامنے آ ئے ہیں اور 65 افراد کی اس وبا سے موت ہو گئی ہے۔واضح رہے اس وقت ریاست کیرالہ سے سب سے زیادہ کیس رپورٹ ہو رہے ہیں ۔

کورونا کے معاملوں میں اضافہ کے رجحان میں سب سے فکر اس بات کی ہے کہ کورونا وبا کی آر ویلیو بڑھ رہی ہے۔ کورونا سے متاثر ایک مریض جتنے لوگوں کو اپنی لپیٹ میں لیتا ہے اس کو آر ویلیو کہا جاتا ہے یعنی اگر ایک مریض ایک شخص کو وائرس دیتا ہے تو اس کی آر ویلیو آر1 ہوگی اور اگر دو افراد کو اس کی وجہ سے بیماری ہوتی ہے تو اس کی آر ویلیو 2 ہو گی۔


دہلی ایمس کے ڈاریکٹر رندیپ گلیریا نے ملک میں کورونا کے تازہ معاملوں میں بڑھتی رفتار پر تشویش کا اظہار کیا ہے اور انہوں نے کہا ہے کہ ’’ہندوستان میں کورونا کی آر ویلیو بڑھ رہی ہے اور یہ تشویش کا پہلو ہے اور حال ہی میں آشاریہ نو چھہ سے بڑھ کر اس کی آ ر ویلیو کا ایک ہو جانا فکر کی بات ہے اور ملک کے کچھ حصوں میں جس طرح معاملوں میں اضافہ ہو رہا ہے اس میں حکمت عملی بنانے کی ضرورت ہے۔‘‘

واضح رہے ڈاکٹر حضرات کا کہا ہے کہ کورونا کو لے کر جس طرح پورے ملک میں لاپروائی برتی جا رہی ہے اس کی وجہ سے تیسری لہر کے آنے میں دیر نہیں لگے گی ۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔