نئی دہلی: آدتیہ ٹھاکرے کی راہل گاندھی سے ملاقات

مہاراشٹر میں مہاوکاس اگھاڑی (شیوسینا، این سی پی اور کانگریس) سرکار کے بننے کے بعد پہلی بار آدتیہ ٹھاکرے راہل گاندھی سے ملے ہیں ایسے میں اس ملاقات کو اہم مانا جا رہا ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

ممبئی: مہاراشٹر سرکار میں کابینی وزیر اور ریاست کے وزیر اعلی ادھو ٹھاکرے کے بیٹے آدتیہ ٹھاکرے بدھ کو دہلی پہنچے جہاں انہوں نے کانگریس رہنما راہل گاندھی سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی۔ اس ملاقات کی ممبئی میں شیوسینا ترجمان نیلم گورہے نے تصدیق کی ہے لیکن تفصیلات بتلانے سے انکار کر دیا۔

مہاراشٹر میں مہاوکاس اگھاڑی (شیوسینا، این سی پی اور کانگریس) سرکار کے بننے کے بعد پہلی بار آدتیہ ٹھاکرے راہل گاندھی سے ملے ہیں ایسے میں اس ملاقات کو اہم مانا جا رہا ہے۔ بتا دیں کہ اس سے پہلے بھی آدتیہ ٹھاکرے نے شیوسینا کی قیادت میں بنی سرکار کے حلف برداری پروگرام کے لئے دہلی پہنچ کر کانگریس کی عبوری صدر سونیا گاندھی، راہل گاندھی اور سابق وزیر اعظم ڈاکٹر منموہن سنگھ کو دعوت دی تھی۔ آدتیہ ٹھاکرے بدھ کو دہلی میں راہل گاندھی کی رہائش گاہ 12 تغلق لین پہنچے۔ یہاں دونو ں لیڈران کے درمیان بات چیت ہوئی۔

ذرائع کے مطابق یہ رسمی ملاقات تھی لیکن اندازہ لگایا جا رہا ہے کہ اب دونوں پارٹیوں کے درمیان رشتوں کا مزید مضبوط ہونا متوقع ہے۔ کانگریس اور شیوسینا کے درمیان مجاہد آزادی وینایک دامودر ساورکر کے معاملہ پر تلخ تبصرہ دیکھنے کو ملا تھا۔ راہل گاندھی نے تو یہاں تک کہہ دیا تھا کہ ان کا نام راہل ساورکر نہیں ہے اس لئے وہ معافی نہیں مانگیں گے۔

وہیں شیوسینا نے کہا تھا کہ کانگریس کو ابھی ساورکر کو سمجھنا پڑے گا۔ راہل گاندھی نے ادھو ٹھاکرے کی حلف برداری تقریب میں موجود نہ ہونے کو لیکر ایک خط لکھا تھا۔ راہل گاندھی نے چٹھی کے ذریعے انہیں وزیر اعلی عہدے کی حلف لینے کے لئے مبارکباد دی تھی۔

راہل گاندھی نے اس خط میں لکھا حلف برداری تقریب میں آپ کی دعوت کے لئے شکریہ میں مہاراشٹر کے وزیر اعلی کے طور پر حلف لینے کے لئے آپ کو مبارکباد دیتا ہوں۔ مجھے افسوس ہے کہ میں تقریب میں موجود نہیں رہوں گا لیکن مجھے خوشی ہے کہ ہماری جمہوریت کو کمزور کرنے کی بی جے پی کی کوشش کو ہرانے کے لئے مہاوکاس اگھاڑی ایک ساتھ آگے آیا ہے۔

معلوم ہو کہ پچھلے سال 28 نومبر 2019 کو آدتیہ ٹھاکرے نے دہلی پہنچ کر سونیا گاندھی اور منموہن سنگھ سے ملاقات کرتے ہوئے حلف برداری تقریب میں شامل ہونے کی دعوت دی تھی۔

حالانکہ سونیا گاندھی نے ادھو ٹھاکرے کو خط لکھ کر خود کے نہ شامل ہو پانے کے لئے افسوس جتاتے ہوئے کہا تھا شیوسینا، این سی پی، کانگریس غیر معمولی حالات میں ایک ساتھ آئے ہیں ایسے وقت میں جب ملک بی جے پی کے غیر متوقع خطرے میں ہے مجھے افسوس ہے کہ میں حلف برداری تقریب میں شامل نہیں ہو پاؤں گا۔

next