تلنگانہ میں سیلابی صورت حال جائزہ لینے کے لیے مرکزی ٹیم کرے گی دورہ

مرکزی وزیر سیاحت اور ریاستی بی جے پی صدر جی کشن ریڈی نے اتوار کو کہا کہ یہ فیصلہ مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے نئی دہلی میں ریاستی بی جے پی کے سینئر رہنماؤں کی ملاقات کے بعد کیا ہے

<div class="paragraphs"><p>تلنگانہ میں سیلاب / آئی اے این ایس</p></div>

تلنگانہ میں سیلاب / آئی اے این ایس

user

قومی آوازبیورو

حیدرآباد: مرکز کی ایک ٹیم پیر کو تلنگانہ کا دورہ کرے گی تاکہ سیلاب سے ہونے والے نقصانات کا جائزہ لے سکے۔ مرکزی وزیر سیاحت اور ریاستی بی جے پی صدر جی کشن ریڈی نے اتوار کو کہا کہ یہ فیصلہ مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے نئی دہلی میں ریاستی بی جے پی کے سینئر رہنماؤں کی ملاقات کے بعد کیا ہے۔

کشن ریڈی نے کہا کہ امت شاہ نے سکریٹری داخلہ کو ہدایت دی کہ وہ فوری طور پر ایک اعلیٰ سطحی ٹیم تلنگانہ روانہ کریں تاکہ سیلاب سے ہونے والے نقصانات کا جائزہ لیا جا سکے۔ ٹیم میں کئی وزارتوں کے افسران ہوں گے۔ یہ ٹیم 31 جولائی سے ریاست کا دورہ کرے گی تاکہ ریاستی انتظامیہ کی طرف سے کئے گئے نقصانات اور امدادی کاموں کا موقع پر جائزہ لے سکے۔

نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (این ڈی ایم اے) کے مشیر کنال ستیارتھی کی سربراہی میں اس ٹیم میں زراعت، مالیات، آبی وسائل، بجلی، سڑک ٹرانسپورٹ اور ہائی ویز اور نیشنل ریموٹ سینسنگ سینٹر جیسے محکموں کے اہلکار شامل ہوں گے۔


مزید برآں، تلنگانہ حکومت کی طرف سے حتمی یادداشت پیش کرنے کے بعد وہی مرکزی ٹیم دوبارہ ریاست کا دورہ کرے گی تاکہ نقصان کا تفصیلی جائزہ لیا جا سکے اور تلنگانہ میں سیلاب کے پیش نظر اضافی مرکزی امداد کی منظوری کے لیے حتمی سفارش کی جا سکے۔‘‘

وزارت داخلہ کی طرف سے ایک دفتری میمورنڈم میں کہا گیا "ٹیم یہ بھی سفارش کرے گی کہ کیا آفت کو 'شدید نوعیت' کا قرار دیا جا سکتا ہے۔‘‘

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


/* */