سہارا انڈیا کے چیئرمین سبرت رائے سمیت 14 کے خلاف امانت میں خیانت کرنے کا معاملہ درج

بھیوانی واقع سول لائن تھانہ انچارج رمیش چندر نے بتایا کہ سہارا انڈیا کے چیئرمین سبرت رائے سہارا، ڈپٹی چیئرمین سپنا رائے، ڈائریکٹر ضیا قادری سمیت 14 لوگوں کے خلاف فراڈ کا معاملہ درج کیا گیا ہے۔

سبرت رائے
سبرت رائے
user

یو این آئی

بھیوانی: سہارا انڈیا کے چیئرمین سبرت رائے سمیت کمپنی کے 14 حکام کے خلاف ہریانہ واقع بھیوانی کے سول لائن تھانہ میں امانت میں خیانت اور فریب دہی کا معاملہ درج کیا گیا ہے۔ بھیوانی میں تقریباً دو ہزار سرمایہ کاروں کا 30 کروڑ کی ادائیگی کمپنی سے رک جانے پر سرمایہ کاروں نے اس کی شکایت وزیر اعلی منوہر لال کھٹر اور داخلہ کے وزیر انل وج سے کی تھی۔ اس کے بعد یہ معاملہ درج کیا گیا ہے۔

شکایت کنندہ لوہڑ بازار کے رہنے والے وید پرکاش نے بتایا کہ کمپنی کے یہاں پرانا بس اسٹینڈ کراوٗن پلازہ میں واقع دفتر میں تقریباً دو ہزار سرمایہ کاروں نے گزشتہ کئی برسوں سے روپیہ جمع کیا تھا۔ ان کی تقریباً 30 کروڑ روپے کی ادائیگی باقی ہے۔ کمپنی کے افسر پیسہ واپس کرنے کے بجائے مبینہ طور پر بہانہ بازی کر رہے ہیں اور جھوٹی یقین دہانی کرا رہے ہیں۔


سہارا انڈیا کمپنی کے خلاف ایجنٹوں کو پیسہ کی ادائیگی نہیں کرنے پر انبالہ کینٹ میں بھی گزشتہ جولائی اور نارنول میں 27 اگست کو فریب دہی کا معاملہ درج ہوا ہے۔ اسی طرح یمنا نگر میں بھی اس کمپنی کے خلاف گزشتہ چار ستمبر کو فراڈ کا معاملہ درج ہوا۔ معاملہ درج ہونے کے بعد کمپنی کے حکام نے دس دن کے اندر رقم کی ادائیگی کا یقین دلایا تھا۔

تھانہ انچارج رمیش چندر نے بتایا کہ وید پرکاش کی شکایت پر سہارا انڈیا کے چیئرمین لکھنو شہر میں رہنے والے سبرت رائے سہارا، ڈپٹی چیئرمین سپنا رائے، ڈائریکٹر ضیا قادری سمیت 14 لوگوں کے خلاف فراڈ کا معاملہ درج کیا گیا ہے۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔