کیرالہ کے 8 سیاحوں کی نیپال میں موت، 5 نابالغ شامل

نیپال کی سیر پر گئے کیرالہ سے گئے سیاحوں کے ایک گروپ کے 8 افراد کی منگل کی صبح ایک ہوٹل کے کمرے میں دم گھٹنے سے موت ہو گئی۔ مرنے والوں میں پانچ بچے بھی شامل ہیں

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

ترواننت پورم: نیپال کی سیر پر گئے کیرالہ سے گئے سیاحوں کے ایک گروپ کے 8 افراد کی منگل کی صبح ایک ہوٹل کے کمرے میں دم گھٹنے سے موت ہو گئی۔ مرنے والوں میں پانچ بچے بھی شامل ہیں۔

ذرائع نے بتایا کہ سیاحوں کا ایک گروپ ترواننت پورم سے نیپال گیا تھا جہاں کھٹمنڈو کے دمن علاقے کے ’ایورسٹ پنورمار‘ ریزورٹ میں ان میں سے 8 افراد مردہ حالت میں پائے گئے۔ موت کی وجوہات کا ابھی تک پتہ نہیں چل سکا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ گروپ کے کچھ دیگر افراد کو علاج کے لئے کھٹمنڈو کے ایک اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے۔

مکوان پور ضلع پولیس آفس کے ایس پی سشیل سنگھ راٹھور نے اطلاع دیتے ہوئے کہا کہ ’’یہ افراد کمرے میں گیس ہیٹر کا استعمال کر رہے تھے۔ ایسی صورتحال میں ممکن ہے کہ ان کی موت دم گھٹنے کی وجہ سے ہوئی ہو۔‘‘

نیپالی اخبار ہمالیہ ٹائمز کے مطابق تمام افراد کو بے ہوشی کی حالت میں کھٹمنڈو پہنچایا گیا۔ یہاں کے ایک اسپتال میں اس کی موت ہو گئی۔ دمن کے ایوریسٹ پینورما ریسارٹ کے منیجر کے مطابق کمرے کی تمام کھڑکیاں اور دروازے اندر سے بند تھے۔

جاں بحق ہونے والوں میں 38 سالہ پروین کرشنا نارائن، 35 سالہ شرنیا ششی، 34 سالہ رنجیت کمار اے پی کے علاوہ اندرا لکشمی (9)، سری بھدرا (7)، آرچا پروین (5)، ابھین شورنائے نائر (5) اور ویشنو رنجیت (2) شامل ہیں۔

کیرالہ کے وزیر سیاحت کداکمپلی سریندرن نے کہا، ’’جیسے ہی نیپال کے دمن میں واقع ایک ہوٹل کے کمرے میں کیرالہ کے 8 سیاحوں کی ہلاکت کی حیرت ناک خبر ہمارے پاس پہنچی، ریاستی پولیس سربراہ کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ نیپال پولیس سے رابطہ کریں اور ضروری کارروائی کریں۔‘‘

Published: 21 Jan 2020, 6:11 PM
next