کورونا: کیرالہ میں 69 سالہ شخص ہلاک، ہندوستان میں اموات کی تعداد 20 پہنچی

دوبئی سے لوٹے بزرگ نے ہفتہ کی صبح تقریباً 8 بجے کیرالہ کے اسپتال میں آخری سانس لی۔ یہ کیرالہ میں کورونا وائرس کی وجہ سے پہلی موت ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

ہندوستان میں کورونا وائرس کی وجہ سے اموات کی تعداد دھیرے دھیرے بڑھتی جا رہی ہے اور آج صبح کیرالہ میں بھی ایک 69 سالہ بزرگ کی اس وائرس نے جان لے لی۔ کورونا وائرس سے متاثر سب سے زیادہ مریض اس وقت کیرالہ ریاست میں ہی ہیں لیکن آج ہوئی موت اس ریاست میں پہلی ہلاکت ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ بزرگ حال ہی میں دوبئی سے سفر کر کے لوٹے تھے اور طبیعت ناساز ہونے کے بعد ایرناکولم میڈیکل کالج میں علاج کرا رہے تھے۔

میڈیا ذرائع سے موصول ہو رہی خبروں کے مطابق بزرگ میں نمونیا کی علامت موجود تھی جس کے بعد انھیں 22 مارچ کو اسپتال کے آئسولیشن وارڈ میں داخل کرایا گیا تھا۔ بعد میں پتہ چلا کہ وہ کورونا وائرس کی زد میں ہیں۔ یہ بھی بتایا جاتا ہے کہ بزرگ میں ہائی بلڈ پریشر اور ایکیوٹ ہارٹ ڈزیز کی بھی شکایت تھی۔ ڈاکٹروں نے انھیں سخت نگرانی میں رکھا ہوا تھا اور ہر طرح سے بچانے کی کوشش کی گئی لیکن بالآخر وہ فوت کر گئے اور یہ کیس کیرالہ میں پہلی ہلاکت کے طور پر درج کیا گیا۔

کیرالہ میں کورونا وائرس کی وجہ سے ہوئی اس پہلی موت کے بعد ہندوستان میں مہلوکین کی تعداد 20 ہو گئی ہے۔ اس سے قبل مہاراشٹر میں سب سے زیادہ 4 اموات ہوئی ہیں۔ اس کے بعد گجرات اور کرناٹک میں 3-3، مدھیہ پردیش میں 2 اور تمل ناڈو، بہار، پنجاب، دہلی، مغربی بنگال، جموں و کشمیر اور ہماچل پردیش میں 1-1 شخص کی موت ہوئی ہے۔ ہندوستان میں کورونا وائرس سے متاثر مریضوں کی تعداد بھی تیزی کے ساتھ بڑھ رہی ہے اور یہ اب 900 کے قریب پہنچ گئی ہے۔