بہار: نتیش حکومت کی وجہ سے 14.5 لاکھ لوگ راشن سے محروم، چراغ پاسوان

چراغ پاسوان نے کہا کہ مرکزی حکومت کی کوششوں کے باوجود نتیش حکومت نے راشن کارڈ ہولڈروں کے ناموں کی فہرست نہیں بھیجی، جس کی وجہ سے 14.5 لاکھ بہار کے باشندگان کو راشن فراہم کرنے میں پریشانی کا سامنا ہے

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

پٹنہ: لوک جن شکتی پارٹی (ایل جے پی) کے صدر چراغ پاسوان نے بہار حکومت کے کام پر سوال اٹھاتے ہوئے جمعہ کے روز کہا کہ بہار حکومت کی وجہ سے ریاست کے 14.5 لاکھ لوگوں کو راشن نہیں مل رہا ہے۔

قومی جمہوری اتحاد (این ڈی اے) کی اتحادی جماعتوں میں سے ایک ایل جے پی کے صدر چیراغ نے بہار حکومت پر الزام عائد کرتے ہوئے ٹوئٹ کیا، ’’لاک ڈاؤن میں مرکزی حکومت نے تمام ریاستوں سے ان 39 لاکھ راشن کارڈ ہولڈروں کی فہرست جلد بھیجنے کو کہا ہے جنہیں راشن نہیں مل پا رہا ہے۔ جس میں ریاست بہار کے تقریباً ساڑھے 14 لاکھ مستفیدین بہار سے تعلق رکھتے ہیں۔‘‘


انہوں نے مزید کہا کہ مرکزی حکومت کی مستقل کوششوں کے باوجود بہار حکومت نے ابھی تک فہرست ارسال نہیں کی ہے۔ اس کی وجہ سے، تقریباً 14.5 لاکھ بہار کے باشندگان کو راشن فراہم کرنے میں پریشانی کا سامنا ہے۔

بہار کے جموئی سے رکن پارلیمنٹ چیراغ پاسوان نے ایک دیگر ٹویٹ میں لکھا، ’’جن کا نام راشن کارڈ کی فہرست میں نہیں ہے، انہیں کافی پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ بہار میں تقریباً 14.5 لاکھ افراد کو اس میں شامل کیا جانا ہے لیکن ریاستی حکومت نے ابھی تک مستفید افراد کی فہرست مرکز کو نہیں بھیجی ہے جس سے انہیں راشن کا فائدہ نہیں مل رہا ہے۔ مجھے یقین ہے کہ نتیش کمار جلد ہی اس پر ایکشن لیں گے۔‘‘

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


Published: 24 Apr 2020, 4:40 PM