دہلی: 28 واں عالمی کتاب میلہ 4 سے 12 جنوری تک

اگروال نے بتایا کہ پرگتی میدان میں چونکہ تعمیراتی کام چل رہا ہے لہذا تھوڑی سے پریشانی لوگوں کو ہو سکتی ہے لیکن ہم نے شٹل گاڑیاں چلائی ہیں جو داخلہ دروازوں پر دستیاب ہوں گی

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

نئی دہلی: 28 واں عالمی کتاب میلہ 4 سے 12 جنوری تک راجدھانی دہلی کے پرگتی میدان میں شروع ہونے جا رہا ہے جس کا افتتاح انسانی وسائل اور ترقی کے وزیر رمیش پوکھریال نشنک کریں گے۔ نیشنل بک ٹرسٹ (این بی ٹی) کے چیئرمین پروفیسر گووند پرساد شرما نے صحافیوں کو بتایا کہ اس بار میلہ کی تھیم ’مہاتما گاندھی: مصنفین کے مصنف‘ ہوگی۔ اس بار میلہ میں کوئی مہمان ملک شامل نہیں ہوگا۔ میلہ میں 600 ملکی و غیر ملکی پبلشرز کے 1300 سے زیادہ اسٹال ہوں گے اور 23 ممالک حصہ لیں گے، لیکن پاکستان، بنگلہ دیش اور افغانستان وغیرہ کو مدعو نہیں کیا گیا ہے۔

یہ پوچھے جانے پر کہ ان ممالک کو میلہ کے لئے کیوں نہیں مدعو کیا گیا ہے اس پر شرما نے کہا ’’یہ آپ بھی جانتے ہیں کہ انہیں کیوں نہیں مدعو کیا گیا ہے، اس کے دراصل سیاسی وجوہات ہیں‘‘۔ انہوں نے بتایا کہ اس سال 2020 میں پیرس کتاب میلہ (فرانس) میں ہندوستان مہمان ملک کے طور پر شامل ہوگا۔

شرما نے بتایا کہ گاندھی خود مصنف تو تھے ہی مصنفین پر بھی ان کا بہت اثر پڑا، گاندھی کی 150 ویں جينتی سال میں بیرون ملک میں ہونے والے کتاب میلہ میں گاندھی پر خصوصی توجہ مرکوز کی گئی۔ ابو ظہبی، میکسیکو اور فرینکفرٹ عالمی کتاب میلہ میں بھی ٹرسٹ نے گاندھی کو مرکوز کیا تھا۔ ٹرسٹ کے افسر کمار وکرم نے بتایا کہ گاندھی نہ صرف خود مصنف تھے بلکہ پبلشر اور پرنٹر بھی تھے۔ نوبل انعام یافتہ روم رولاں نے گاندھی کو دانشوروں کا ماسٹر بتایا تھا۔ گاندھی پویلین میں پریم چند ملك راج آنند اور اوما شنکر جوشی جیسے 24 مصنفین کا ایک پینل بھی بنایا گیا ہے جن پر گاندھی کا گہرا اثر پڑا۔ گاندھی جی نے 1905 میں اینی بیسنٹ کی بھگوت گیتا کو بھی شائع کیا تھا۔

گزشتہ سال بارہ لاکھ ناظرین نے میلہ دیکھا تھا۔ اس بار میلہ میں داخلہ گیٹ نمبر ایک اور گیٹ نمبر دس سے ہوگا۔ اسکولی ڈریس میں اسٹوڈنٹس کو داخلہ فیس نہیں لگے گی۔ اگروال نے بتایا کہ پرگتی میدان میں تعمیراتی کام چل رہا ہے لہذا تھوڑی سے پریشانی لوگوں کو ہو سکتی ہے لیکن ہم نے شٹل گاڑیاں چلائی ہیں جو داخلہ دروازوں پر دستیاب ہوں گی۔ اگلے سال سے کوئی تکلیف نہیں ہوگی اور پرگتی میدان میں جدید ہال بن جانے سے میلہ خوبصورت طریقے سے منعقد ہوگا۔

یہ پوچھے جانے پر کہ ہر سال میلہ میں کسی نہ کسی ملک کو مہمان ملک کے طور پر شامل کیا جاتا رہا ہے، لیکن اس بار کسی بھی ملک کو مہمان ملک نہیں بنایا گیا ہے، این بی ٹی کے صدر نے کہا کہ پرگتی میدان میں تعمیری کام چل رہا ہے لہذا کسی مہمان ملک کو مدعو نہیں کیا گیا ہے۔ تعمیراتی کام کی وجہ سے مشکلات کو دیکھتے ہوئے یہ فیصلہ کیا گیا ہے۔ پریس کانفرنس میں این بی ٹی کی ڈائریکٹر نیرا جین، آئی ٹی پی او ( انڈین ٹریڈ پروموشن تنظیم) کے ایگزیکٹیو چیئرمین راجیش اگروال اور انسانی وسائل ترقیات وزارت میں ایڈیشنل ڈائریکٹر مدن موہن بھی موجود تھے۔

شرما نے بتایا کہ مہاتما گاندھی کی 150 ویں جینتی سال کے پیش نظر میلہ میں گاندھی پویلین تیار کیا گیا ہے جس میں مہاتما گاندھی کی لکھی گئی کتابوں کے علاوہ ان پر مختلف ہندوستانی زبانوں میں لکھی گئی 500 کتابوں کی نمائش بھی لگائی جائے گی۔ گجرات میں احمد آباد کے سابرمتی آشرم سے حوصلہ افزوں اور خاص طور پر ڈیزائن کیا گیا اس منڈپ میں ہندوستانی زبانوں کے 100 پبلشرز کی 500 کتابوں کی ایک خصوصی نمائش بھی ہوگی۔ انہوں نے بتایا کہ ٹرسٹ نے گزشتہ سال گاندھی جی پر چھ سات کتابیں شائع کی ہیں اور ٹرسٹ کی فہرست کتب میں گاندھی پر خصوصی شمارہ شائع کیا گیا ہے۔