وراٹ کی واپسی، نصف سنچری لگائی، پلے آف کی امیدیں برقرار

بنگلورو کی امیدیں اب دہلی کے آخری میچ کے نتیجے پر منحصر ہوں گی، جس کا رن ریٹ پلس ہے۔ پنجاب اور حیدرآباد بنگلورو کی جیت کے ساتھ ٹورنامنٹ سے باہر ہو گئے ہیں۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

سابق کپتان وراٹ کوہلی (73) کی فارم میں واپسی اور گلین میکسویل کے ناٹ آؤٹ 40 رنز کی بدولت رائل چیلنجرز بنگلور نے آئی پی ایل کے ایک میچ میں گجرات ٹائٹنز کو آٹھ وکٹوں سے شکست دے کر ٹیم نے پلے آف میں جگہ بنانے کے لئے اپنی امیدیں برقرار رکھی ہیں۔

گجرات نے کپتان ہاردک پانڈیا کے ناٹ آؤٹ 62 رنز کی بدولت 20 اوور میں پانچ وکٹ پر 168 رنز کا چیلنجنگ اسکور بنایا لیکن بنگلورو نے 18.4 اوور میں دو وکٹ پر 170 رنز بنا کر میچ جیت لیا۔ یہ بنگلورو کی 14 میچوں میں آٹھویں جیت تھی اور وہ 16 پوائنٹس کے ساتھ ٹیبل میں چوتھی پوزیشن پر آگئی ہے لیکن ان کا مائنس نیٹ رن ریٹ انہیں نقصان پہنچا سکتا ہے۔ بنگلورو کی امیدیں اب دہلی کے آخری میچ کے نتیجے پر منحصر ہوں گی، جس کا رن ریٹ پلس ہے۔ پنجاب اور حیدرآباد بنگلورو کی جیت کے ساتھ ٹورنامنٹ سے باہر ہو گئے ہیں۔


وراٹ نے 54 گیندوں میں 73 رن بنائے جس میں آٹھ چوکے اور دو چھکے لگائے اور کپتان فاف ڈو پلیسس (44) کے ساتھ ابتدائی شراکت میں 115 رنز جوڑے۔ گلین میکسویل کے آتے ہی راشد خان کی گیند پر چھکا لگا لیکن گیند اسٹمپ کو چھوتے ہوئے باہر چلی گئی۔ بیلز میں بھی لائٹ جلی لیکن بیلز نہیں گرے اور میکسویل نے اس کا بھرپور فائدہ اٹھایا اور چوکے اور چھکے لگائے۔ ڈو پلیسس کو آؤٹ کرنے والے راشد نے وراٹ کو اسٹمپ کیا۔ میکسویل نے اس کے بعد دنیش کارتک کے ساتھ میچ نمٹادیا۔

جس انداز کا آر سی بی کو وراٹ کوہلی کا انتظار تھا وہ آج دیکھنے کو ملا۔ وہی پرانا جارحانہ انداز۔ یہی وجہ تھی کہ گجرات ٹائٹنز کی طرف سے دیے گئے 169 کے ہدف کو حاصل کرنے کے دوران آر سی بی کے اوپنرز مکمل طور سے حاوی رہے۔ وراٹ کو میچ کے بہترین کھلاڑی کا ایوارڈ ملا۔


ٹاس جیتنے کے بعد پہلے بلے بازی کرتے ہوئے ہاردک نے 47 گیندوں پر ناٹ آؤٹ 62 رنز میں چار چوکے اور تین چھکے لگائے۔ گجرات نے آخری پانچ اووروں میں 50 رنز جوڑے تاکہ ٹیم کو فائٹنگ اسکور تک پہنچایا۔ ایک وقت میں گجرات ٹائٹنز کو 160 رنز تک پہنچتےہوئے نہیں لگ رہا تھا لیکن اس ٹیم نے ایک بار پھر متحد ہوکر کمال کردیا۔ اگر دیکھا جائے تو اس بار ملر کا کردار مختلف رہا ہے۔ انہوں نے ہاردک کی بہت اچھا تعاون کیا۔ جب پہلے بلے بازی کرنے آئے تو ہاردک دوبارہ فارم میں واپس آئے۔
ریدھیمان ساہا نے 22 گیندوں میں 31 رنز بنائے جبکہ میتھیو ویڈ نے 13 گیندوں میں 16 رنز بنائے۔ ڈیوڈ ملر نے 25 گیندوں پر تین چھکوں کی مدد سے 34 اور راشد خان نے چھ گیندوں پر ایک چوکے اور دو چھکوں کی مدد سے ناٹ آؤٹ 19 رنز بنائے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔