آئی پی ایل 2020: راشد خان خصوصی گیند بازوں کے کلب میں شامل

راشد خان 13 ویں سیزن میں 16 میچ کھیل کر 5.37 کے اکانومی ریٹ سے رنز دے کر 20 وکٹ حاصل کرنے میں کامیاب رہے۔ ایک سیزن میں 20 یا اس سے زیادہ وکٹیں حاصل کرنے والے راشد خان کا اکونومی ریٹ سب سے کم ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

ابو ظہبی: سن رائزرس حیدرآباد کے راشد خان نے انڈین پریمیر لیگ کے 13 ویں سیزن میں ایک نیا سنگ میل قائم کرلیا ہے۔ راشد خان نے سیزن میں 6 سے کم اکونومی ریٹ سے 20 وکٹیں حاصل کرنے والے بالرز کے کلب میں شمولیت اختیار کرلی ہے۔

کوالیفائر ٹو میں سن رائزرس حیدرآباد کی ٹیم دہلی کیپٹلز سے 17 رن سے ہار گئی۔ اگرچہ کوالیفائر تک پہنچنے کا سفر حیدرآباد کے لئے آسان نہیں تھا لیکن راشد خان نے اپنی بالنگ کی بنیاد پر ہی یہ ممکن کیا۔ راشد خان نے اس سیزن میں عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے اور ایک خاص کلب میں داخل ہوئے ہیں۔

راشد خان 13 ویں سیزن میں 16 میچ کھیل کر 5.37 کے اکانومی ریٹ سے رنز دے کر 20 وکٹ حاصل کرنے میں کامیاب رہے۔ ایک سیزن میں 20 یا اس سے زیادہ وکٹیں حاصل کرنے والے گیند بازوں میں راشد خان کا اکونومی ریٹ سب سے کم ہے۔ آئی پی ایل کی تاریخ کے سب سے کامیاب بالر میں سے ایک لست ملنگا ہیں جنہوں نے ایک سیزن میں سب سے کم اکونومی ریٹ سے وکٹیں لینے والے ہیں۔ 2011 میں ملنگا نے عمدہ بولنگ کرتے ہوئے صرف 5.95 کے اکانومی ریٹ کے ساتھ 28 وکٹیں حاصل کی تھیں۔

اس خصوصی کلب میں آر سی بی کے سابق کپتان انل کمبلے بھی شامل ہیں۔ انل کمبلے نے 2009 میں آر سی بی کی طرف سے کھیلتے ہوئے انہوں نے 5.86 کی شرح کے ساتھ 21 وکٹیں حاصل کیں۔ کے کے آر اسٹار کھلاڑی سنیل نرین واحد کھلاڑی ہیں جنہوں نے دو بار اس کلب میں جگہ بنائی۔ نرین نے پہلی بار 2012 میں 5.48 کے اکانومی ریٹ کے ساتھ بولنگ کی تھی اور 24 وکٹیں حاصل کیں۔ اگلے سال بھی نرین کی شاندار بولنگ جاری رہی اور انہوں نے 5.47 کی اکانومی ریٹ کے ساتھ 22 وکٹیں حاصل کیں۔

next