آئی پی ایل میچ نمبر 33: ناممکن کو ایک بار پھر ڈیویلیرس نے بنایا ممکن، بنگلور 7 وکٹ سے فتحیاب

راجستھان رائلز نے رائل چیلنجرس بنگلور کے سامنے جیت کے لیے 178 رنوں کا ہدف رکھا تھا اور ایک وقت تھا جب بنگلور کے لیے جیت مشکل نظر آ رہی تھی، لیکن ڈیویلیرس کی طوفانی بلے بازی نے سب کچھ بدل دیا۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

مسٹر 360 ڈگری کے نام سے مشہور اے بی ڈیویلئرس کی جارحانہ 55 رن کی اننگز کی بدولت رائل چیلنجرس بنگلور نے راجستھان رائلز کو آج 7 وکٹ سے شکست دے کر 9 میچوں میں چھٹی جیت حاصل کرلی۔ راجستھان نے کپتان اسٹیون اسمتھ (57) کی شاندار نصف سنچری کی عمدہ اننگز کے دوران 20 اوورز میں چھ وکٹوں پر 177 رنز کا چیلنجنگ اسکور بنایا لیکن آخر کے اووروں میں ڈیویلیرس کی دھواں دھار بلے بازی کی بدولت یہ اسکور چھوٹا ثابت ہو گیا۔ بنگلورو نے 19.4 میں تین وکٹ کے نقصان پر 179 رنز بناکر میچ جیت لیا۔ مین آف دی میچ ڈیویلیرس نے صرف 22 گیندوں پر ایک چوکے اور 6 چھکے کی مدد سے ناٹ آؤٹ 55 رنز کی اننگز کھیلی۔ ڈی ویلیرس نے چھکا لگا کر ہی میچ کو اپنی ٹیم کے نام کیا۔

بنگلور کو آخری دو اوور میں جیت کے لئے 35 رن کی ضرورت تھی اور ڈی ویلیرس کے میدان پر رہتے ٹیم کی امیدیں برقرار تھیں۔ ڈی ویلیرس نے 19 ویں اوور میں بائیں ہاتھ کے تیزگیندباز جے دیو انادکٹ کی پہلی تین گیندوں پر چھکے لگائے۔ گرکیرت سنگھ نے پانچویں گیند پر ایک چوکا لگایا۔اس اوور میں 25 رنز گئے اور بنگلور کے لئے ہدف آسان ہوگیا۔

ڈی ویلیرس نے آخری اوور میں جوفرا آرچر کی چوتھی بال پر لمبا چھکا لگا کر میچ نمٹا دیا ۔ اس سے قبل ڈی ویلیرس نے اپنی نصف سنچری ایک چھکے کی مدد سے مکمل کی۔ ڈی ویلیرس نے حیدرآباد کے کپتان ڈیوڈ وارنر کے 25 یا اس سے کم گیندوں میں سب سے زیادہ 12 نصف سنچری بنانے کے ریکارڈ کی بھی برابری کی۔ ڈی ویلیرس کے ساتھ گرکیرت 17 گیندوں میں ایک چوکے کی مدد سے 19 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے۔ دونوں نے چوتھے وکٹ کے لئے 77 رنز کی میچ جیتنے والی ناٹ آؤٹ شراکت داری کی۔

بنگلورو کی جانب سے سلامی بلے باز دیودت پڈیکل نے 37 گیندوں پر دو چوکوں کی مدد سے 35 رنز ، آرون فنچ نے 11 گیندوں میں دو چھکوں کی مدد سے 14 رنز بنائے اور کپتان وراٹ کوہلی نے 32 گیندوں میں ایک چوکے اور دو چھکوں کی مدد سے 43 رنز بنائے۔ وراٹ کا وکٹ 14 ویں اوور میں 102 کے اسکور پر گرا لیکن اس کے بعد ڈیویلیرس نے اپنے دم پر ٹیم کو جیت دلائی۔

اس سے قبل راجستھان نے پہلے بلے بازی کرتے ہوئے کپتان اسمتھ کی 36 گیندوں میں چھ چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے بنی 57 رن کی شاندار اننگز کی بدولت بنگلور کو چیلنجنگ ہدف دیا تھا۔ راجستھان کو اچھی شروعات بین اسٹوکس اور رابن اتھپا نے دلائی اور دونوں بلے بازوں کے مابین پہلے وکٹ کے لئے 50 رنز کی شراکت ہوئی۔ اسٹوکس کرس ڈی مورس کی گیند پر اے بی ڈیویلیرس کو کیچ دے بیٹھے اور 19 گیندوں میں دو چوکوں کی مدد سے انہوں نے صرف 15 رنز بنا ئے۔

اسٹوکس کے آؤٹ ہونے کے بعد اتھپا زیادہ دیر کریز پر نہیں ٹھہر سکے اور لیگ اسپنر یجویندر چہل نے آرون فنچ کے ہاتھوں کیچ آؤٹ کراکر ان کی اننگز کا خاتمہ کیا۔ اتھپا نے 22 گیندوں میں سات چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 41 رنز بنائے۔سنجو سیمسن چھ گیندوں کی اپنی اننگز میں ایک چھکالگاکر صرف نو رن بناکر پویلین لوٹ گئے۔

شہباز احمد نے باونڈری پر اسمتھ کا بہترین کیچ پکڑ ان کا شاندار وکٹ لیا۔ راجستھان کی اننگز میں وکٹ کیپر بلے باز جوس بٹلر نے 25 گیندوں میں ایک چوکے اور ایک چھکے کی مدد سے 24 ، راہل تیوتیا نے 11 گیندوں میں ایک چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے ناٹ آوٹ 19 رنز بنائے ، جبکہ جوفرا آرچر 2 رنز بناکر راجستھان کی اننگز کی آخری گیند پر آؤٹ ہوئے۔ بنگلور کے لئے کرس مورس سب سے کامیاب گیندبازرہے۔ انہوں نے چار اوورز میں 26 رن دے کر چار وکٹ چہل نے 34 رن دے کر دو وکٹیں حاصل کیں۔

next