آئی پی ایل 2020: ممبئی کے خلاف جیت میں سب نے اپنا کردار ادا کیا... شہباز ندیم

ندیم نے میچ کے بعد پریس کانفرنس میں کہا کہ ہم پر کچھ زیادہ دباؤ تھا کیونکہ یہ ہمارے لئے بہت اہم میچ تھا۔ لیکن ہم نے اپنے آخری چند میچ جیتے تھے اور ہماری ٹیم اچھی تال میں تھی۔

شہباز ندیم، تصویر آئی پی ایل
شہباز ندیم، تصویر آئی پی ایل
user

یو این آئی

شارجہ: سن رائزرس حیدرآباد کے اسپنر شہباز ندیم نے کہا کہ انڈین پریمیر لیگ (آئی پی ایل) میں پلے آف کا مقام داؤ پر لگے ہونے کے باوجود انہوں نے ممبئی انڈینز کے خلاف اس اہم میچ میں کسی دوسرے میچ کی طرح 10 وکٹ سے جیت حاصل کرنے میں مدد ملی۔ ندیم نے میچ کے بعد پریس کانفرنس میں کہا کہ ہم پر کچھ زیادہ دباؤ تھا کیونکہ یہ ہمارے لئے بہت اہم میچ تھا۔ لیکن ہم نے اپنے آخری چند میچ جیتے تھے اور ہماری ٹیم اچھی تال میں تھی۔ انہوں نے کہا کہ لہذا ہم نے اسے دوسرے میچ کی طرح لیا اور سب نے اپنا کردار ادا کیا جس کی وجہ سے ہمیں جیتنا آسان ہوگیا۔ جب آپ کسی مضبوط ٹیم کو شکست دیتے ہیں تو اچھا لگتا ہے۔ اس سے ہماری ٹیم کے حوصلے بلند ہوں گے۔

میچ کے بعد ندیم نے کہا کہ میں پچھلے کچھ سالوں سے اس طرح سے کھیل رہا ہوں۔ یہ ضروری ہے کہ جب بھی آپ کو امکانات ملیں، آپ اپنا 100 فیصد دینے کی ضرورت ہوگی اور آج بھی وہی سامنے آیا ہے۔ مجھے خوشی ہے کہ میں ٹیم کی جیت میں اہم کردار ادا کرنے میں کامیاب رہا ہوں۔ ٹیم میں شراکت کرنا ہمیشہ اچھا لگتا ہے۔ اس وقت سبھی ہماری ٹیم میں حصہ ڈال رہے ہیں اور اسی طرح میرا کام بھی ہے۔ ندیم نے بتایا کہ وہ پچھلے دو سالوں سے کیرم بال پر کام کر رہے ہیں اور ممبئی کے خلاف میچ میں اس کا نتیجہ ملا۔


ندیم نے اس کے بارے میں کہا کہ میں ایک دو سال سے کیرم بال پر کام کر رہا ہوں اور مجھے لگا کہ آج اس کے استعمال کا صحیح وقت ہے۔ بائیں ہاتھ کے بلے بازوں کے لئے کیونکہ یہ بہت موثر ثابت ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ راؤنڈ آرم کی ڈلیوری زیادہ اچھال نہیں اٹھاتی لیکن اس کا انحصار بھی گیند پر ہوتا ہے۔ اگر یہ سیم پر ہے تو یہ اضافی اچھال دیتا ہے۔ آج میں گیند کو اسکڈ کرنے کی کوشش کر رہا تھا۔ یہ ایک بہت چھوٹا میدان ہے لیکن پچ سست ہوتی جا رہی تھی لہذا اسپنر کی حیثیت سے اگر آپ اسے صحیح ایریا میں کرتے ہیں تو یہاں کی پچ بھی آپ کی مدد کرتی ہے۔

سن رائزرس نے لگاتار تین میچ جیتے اور لیگ مرحلے میں تیسرے نمبر پر رہے۔ جمعہ کو ایلیمینیٹر میں ان کا مقابلہ رائل چیلنجرس بنگلور سے ہوگا۔ قابل ذکر ہے کہ اس میچ میں ڈیوڈ وارنر نے ٹاس جیت کر پہلے بولنگ کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ ممبئی نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 20 اوورز میں 8 وکٹوں کے نقصان پر 149 رنز بنائے۔ ممبئی کی طرف سے پولارڈ نے 41، سوریا کمار نے 36 اور ایشان کشن نے 33 رنز بنائے، لیکن کوئی بھی بلے باز 50 کے نشان تک نہیں پہنچ سکا۔


حیدرآباد سے سندیپ شرما نے سب سے زیادہ تین وکٹیں حاصل کیں، جبکہ ہولڈر اور ندیم نے دو دو وکٹیں حاصل کیں۔ حیدرآباد نے اپنی ابتدائی جوڑی کی وجہ سے 150 رنز کا ہدف 17.1 اوورز میں حاصل کرلیا۔ اس فتح کے ساتھ ہی حیدرآباد پلے آف میں پہنچ گیا ہے۔ شہباز ندیم نے حیدرآباد کی اس فتح میں کلیدی کردار ادا کیا۔ انہوں نے اپنے 4 اوور میں دو وکٹیں حاصل کیں، جس میں صرف 19 رنز خرچ ہوئے۔ اس عمدہ کارکردگی کی وجہ سے انہیں مین آف دی میچ ایوارڈ سے بھی نوازا گیا۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;