چنئی اور دہلی ٹاپ پوزیشن کے لیے مقابلہ کریں گے

دونوں ٹیمیں پچھلے نتائج کو پیچھے چھوڑ کر نئے ارادے کے ساتھ میدان میں اتریں گی اور ان کی نظریں پہلے 20 پوائنٹس حاصل کرنے پر ہوں گی۔ جو ٹیم یہ میچ جیتے گی وہ پہلے نمبر پر رہے گی

چنئی بمقابلہ دہلی
چنئی بمقابلہ دہلی
user

یو این آئی

دبئی: دونوں ٹیمیں آئی پی ایل کے میچ ٹیبل میں ٹاپ پوزیشن پر پہنچنے کے لیے کوشاں ہیں جو پیر کو یہاں ہونے والے میچ میں پہلے نمبر پر آنے والی چنئی سپر کنگز اور دوسری پوزیشن والی دہلی کیپیٹلز کے درمیان ہوں گے۔

چنئی اور دہلی دونوں کے درمیان یہ میچ اس آئی پی ایل کا 50 واں میچ ہوگا اور اس کے ساتھ ٹورنامنٹ میں میچوں کی نصف سنچری بھی مکمل ہوگی۔ دونوں ٹیموں کے 9 میچوں اور تین ہار کے بعد 12 میچوں میں سے ہر ایک کے 18 پوائنٹس ہیں لیکن بہتر رن ایوریج کی بنیاد پر چنئی پہلے اور دہلی دوسرے نمبر پر ہیں۔ چنئی کا نیٹ رن ریٹ +0.829 ہے جبکہ دہلی کا نیٹ رن ریٹ +0.551 ہے۔

ہفتہ کو دہلی نے اپنے میچ میں ممبئی انڈینز کو چار وکٹوں سے جبکہ چنئی کو ہائی اسکورنگ میچ میں راجستھان رائلز سے سات وکٹوں سے شکست دی تھی۔ دونوں ٹیموں کے درمیان پہلا مرحلہ ممبئی کے وانکھیڑے اسٹیڈیم میں کھیلا گیا تھا جس میں دہلی نے سات وکٹوں سے کامیابی حاصل کی تھی۔ چنئی نے 20 اوورز میں سات وکٹوں پر 188 جبکہ دہلی نے اوپنر شیکھر دھون کے 85 رنز کی بدولت 18.4 اوورز میں تین وکٹوں پر 190 رنز بناکر یکطرفہ جیت حاصل کی تھی۔

دونوں ٹیموں نے متحدہ عرب امارات میں اب تک بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے پلے آف میں جگہ حاصل کی ہے۔ تاہم چنئی نے کل اپنی جارحانہ بلے بازی سے راجستھان کو شکست دے کر کچھ حیران کیا تھا۔ چنئی کے کپتان مہندر سنگھ دھونی کو توقع نہیں تھی کہ راجستھان ان پر اس طرح حملہ کرے گا۔ لیکن اس شکست کے بعد، دھونی کو ضرور چوکنا رہنا چاہیے کہ کسی بھی قسم کا تجربہ خطرے سے خالی نہیں ہوگا۔ تاہم اس شکست میں چنئی کے لیے یہ بھی اطمینان کی بات تھی کہ اس کے اوپنر ریتوراج گائیکواڑ نے اس میچ میں 60 گیندوں پر شاندار سنچری (101) بنائی اور ناٹ آوٹ پویلین لوٹے۔

دوسری طرف دہلی نے شاندار گیندبازی کرتے ہوئے پانچ بار کی چیمپئن ممبئی کو 129 پر روکا اور 19.1 اوورز میں چھ وکٹوں پر 132 رنز بنا کر میچ جیت لیا۔ دہلی کے لیے شروع میں جلدی وکٹ گنوانا کچھ فکر کی بات ہوگی۔

دونوں ٹیمیں پچھلے نتائج کو پیچھے چھوڑ کر نئے ارادے کے ساتھ میدان میں اتریں گی اور ان کی نظریں پہلے 20 پوائنٹس حاصل کرنے پر ہوں گی۔ جو ٹیم یہ میچ جیتے گی وہ پہلے نمبر پر رہے گی، کیونکہ رائل چیلنجرز بنگلور کے تین میچ باقی ہیں اور وراٹ کوہلی کی ٹیم بھی تینوں میچ جیتنے کے بعد 20 پوائنٹس تک پہنچ سکتی ہے۔ اس صورتحال کو دیکھتے ہوئے، چنئی اور دہلی قطعی نہیں چاہیں گی کہ انہیں تیسری پوزیشن پر جانا پڑے جہاں فائنل کھیلنے والی ٹیم کے لئے دو کے بجائے صرف ایک موقع ہی رہ جاتا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔