برطانیہ میں بچوں پر ایسٹرا زینیکا ویکسین کے ٹرائل پر روک

آکسفورڈ کے ترجمان نے کہا کہ ٹرائل میں حفاظتی امور پر کوئی توجہ نہیں دی گئی ہے، لیکن کورونا وائرس سے متاثر لنک کی جانچ کرنے کے لئے برطانیہ اور یورپ میں بڑوں میں تھکّے جمنے کی پریشانیوں پر تشویشات ہیں۔

ایسٹرا زینیکا، تصویر آئی اے این ایس
ایسٹرا زینیکا، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

لندن: آکسفورڈ یونیورسٹی نے کہا کہ اس نے ایسٹرا زینیکا کی کورونا وائرس بیماری کے چھ سے 17 برس کے بچوں اور چھوٹے بچوں کے لئے تیار ویکسین کے ٹرائل پر روک لگادی ہے۔ دی وال اسٹریٹ جنرل (ڈبلیو ایس جے) نے یہ رپورٹ دی ہے۔ آکسفورڈ کے ترجمان نے منگل کو کہا کہ ٹرائل میں حفاظتی امور پر کوئی توجہ نہیں دی گئی ہے، لیکن کورونا وائرس سے متاثر لنک کی جانچ کرنے کے لئے برطانیہ اور یورپ میں بڑوں میں تھکّے جمنے کی پریشانیوں پر تشویشات ہیں۔

اس سے قبل یوروپی میڈیسن ایجنسی (ای ایم اے) نے کہا تھا کہ وہ یورپی ممالک میں ایسٹرا زینیکا ویکسین کی پہلی خوراک لینے والے مریضوں کو درپیش مسائل کی جانچ کر رہا ہے۔ آسٹریا، ایسٹونیا، لتھوانیا، لاتویا، لکسمبرگ، ڈنمارک، بلغاریہ، ناروے، آئس لینڈ، سلووینیا، قبرص، اٹلی، فرانس، جرمنی اور اسپین سمیت متعدد یورپی ممالک نے ایسٹر زینیکا ویکسین کا استعمال معطل کر دیا۔ ای ایم اے نے بعد میں دوا کے استعمال کو جاری رکھنے کی سفارش کی۔ جس کے بعد بہت سارے ممالک نے اس ویکسین سے دوبارہ ویکسینیشن شروع کر دی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔