شام میں فوجی اسکول پر بمباری، اساتذہ اور بچوں سمیت 20 افراد ہلاک

شام میں انسانی حقوق کے مبصر گروپ نے دعویٰ کیا ہے کہ فضائی بمباری میں میزائل اور شیلنگ اسکول کی عمارت میں گرے، جس کے نتیجہ میں 9 طلبا اور 3 اساتذہ ہلاک ہوگئے۔ علاوہ ازیں 8 شہری بھی ہلاک ہوئے ہیں۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

ادلب: شورش زدہ شام میں اتحادی افواج کی بمباری کی زد میں اسکول کی عمارت بھی آگئی جس کے نتیجے میں طلبا اور اساتذہ سمیت 20 افراد ہلاک ہوگئے۔ عالمی خبر رساں ایجنسی کے مطابق شام میں داعش کے آخری ٹھکانے ادلب میں اتحادی افواج کی پیش قدمی جاری ہے۔ روسی فوج نے فضائی بمباری کی جس کے نتیجے میں اسکول کی عمارت مکمل طور پر تباہ ہوگئی۔

شام میں انسانی حقوق کے مبصر گروپ نے دعویٰ کیا ہے کہ فضائی بمباری میں میزائل اور شیلنگ اسکول کی عمارت میں گرے جس کے نتیجہ میں 9 طلبا اور 3 اساتذہ ہلاک ہوگئے۔ علاوہ ازیں 8 شہری بھی ہلاک ہوئے۔ شام کے علاقہ ادلب کے 19 قصبوں اور گاؤں سے اتحادی افواج نے داعش دہشت گردوں سے بازیاب کروا کر شامی حکومت کی عملداری قائم کردی گئی ہے اور مزید پیش قدمی جاری ہے۔

اس دوران شامی اور ترکی فوج کے درمیان جھڑپوں میں دونوں جانب جانی نقصانات کی بھی اطلاعات ہیں۔ واضح رہے کہ شام کے اکثر علاقوں پر شامی حکومت نے قبضہ حاصل کرلیا ہے تاہم ادلب میں اب بھی داعش دہشت گردوں کی جانب سے مزاحمت کا سامنا ہے۔ اس علاقہ میں ترک فوج بھی کرد جنگجوؤں کیخلاف فوجی کارروائیوں میں مصروف ہے۔

next