نیو یارک میں نسلی تعصب کا واقعہ، سپر مارکیٹ میں اندھادھند فائرنگ، 10 افراد ہلاک، متعدد زخمی

امریکی ریاست نیو یارک کے شہر بفیلو کی ایک سپر مارکیٹ میں فوجی یونیفارم میں ملبوس ملزم نے اندھادھند فائرنگ کر 10 لوگوں کو موت کے گھاٹ اتار دیا، جبکہ متعدد کو زخمی کر دیا

تصویر بشکریہ اسکائی نیوز
تصویر بشکریہ اسکائی نیوز
user

قومی آوازبیورو

نیویارک: امریکی ریاست نیویارک میں ایک شخص نے اندھادھند فائرنگ کی واردات کو انجام دیتے ہوئے سابق پولیس افسر سمیت 10 افراد کو ہلاک کر دیا۔ غیرملکی خبر رساں ادارے کے مطابق یہ واقعہ امریکی ریاست نیو یارک کے شہر بفیلو کی ایک سپر مارکیٹ میں پیش آیا۔

رپورٹ کے مطابق 18 برس کا سفید فام حملہ آور فوجی یونیفارم، بکتر بند شیلڈ اور ہیلمٹ پہن کر سپر مارکیٹ میں داخل ہوا اور اندھا دھند فائرنگ شروع کر دی۔

فوجی یونیفارم میں ملبوس ملزم نے فائرنگ کا پورا واقعہ براہ راست سوشل میڈیا پر بھی نشر کیا تاہم پولیس نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے ملزم کو حراست میں لے لیا، جس کی شناخت 18 سالہ پیوٹن ایس گینڈرون کونکلن کے طور پر ہوئی۔ حملہ آور خود کو یہودیوں کا مخالف اور انتہا پسند سفید فام قرار دے رہا تھا۔ ملزم پیٹون گینڈرون کی بندوق پر بھی نسل پرستی کے الفاظ درج تھے۔



ایف بی آئی کے مطابق واقعے کی تحقیقات نفرت انگیز جرائم کے تناظر میں کی جا رہی ہیں جبکہ سیاہ فام کمیونٹی کے افراد نے صدر جو بائیڈن نے واقعے کی شفاف تحقیقات کا مطالبہ کرتے ہوئے انصاف فراہم کرنے کی اپیل کی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔