افغانستان سے امریکی فورسز کے انخلاء پر افسوس نہیں: بائیڈن

امریکی صدر جو بائیڈن نے کہا ہے کہ افغانستان سے امریکی افواج کے انخلاء پر کوئی افسوس نہیں ہے کیونکہ 20 سال بعدوہاں سے نکلنے کا کوئی آسان راستہ نہیں ہے

امریکی صدر جو بائیڈن / آئی اے این ایس
امریکی صدر جو بائیڈن / آئی اے این ایس
user

یو این آئی

واشنگٹن: امریکی صدر جو بائیڈن نے کہا ہے کہ افغانستان سے امریکی افواج کے انخلاء پر کوئی افسوس نہیں ہے کیونکہ 20 سال بعدوہاں سے نکلنے کا کوئی آسان راستہ نہیں ہے۔

مسٹر بائیڈن نے اپنی مدت کارکی پہلی سالگرہ کے موقع پروہائٹ ہاوس میں صحافیوں کے سوالات کے جواب میں یہ بات کہی۔ امریکی افواج کے انخلا کے حوالے سے ان کا کہنا تھا، ’’اپناہاتھ اٹھائیں، اگر آپ کو لگتا ہے کہ کوئی بھی ایک ہی حکومت کے تحت افغانستان کو متحد کر نے کے قابل ہوگا۔

انہوں نے زور دے کر کہا کہ افغانستان میں امریکی افواج کے لیے تقریباً ایک ارب ڈالر ہفتہ وار خرچ کے باوجود وہاں کسی پرامن حل کی ضمانت نہیں ہے۔ انہوں نے جواب میں سوال کرتے ہوئے کہا، ’’سوال یہ ہے کہ کیا میں افغانستان میں ہرہفتےاتنی رقم خرچ کرناجاری رکھ سکتا ہوں۔

انہوں نے کہا، ’’20 سال بعد افغانستان سے آسانی سے باہرنکلنے کا کوئی راستہ نہیں ہے اورمیں نےجوکیااس پر مجھے کوئی افسوس نہیں ہے۔"

امریکی صدر نے افغانستان سے انخلا کے دوران فوجیوں کے جان گنوانے پر افسوس کا اظہار کیا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔