غزہ پر اسرائیلی جارحیت، 2 دن میں 24 فلسطینی جان بحق

غزہ میں وزارت صحت نےبتایا ہے کہ گذشتہ دو روز کے دوران غزہ کے علاقے پر جاری اسرائیلی فضائی حملوں میں اب تک کم سے کم 24 فلسطینی شہید ہوچکے ہیں

Getty Images
Getty Images
user

قومی آوازبیورو

غزہ میں وزارت صحت نےبتایا ہے کہ گذشتہ دو روز کے دوران غزہ کے علاقے پر جاری اسرائیلی فضائی حملوں میں اب تک کم سے کم 24 فلسطینی شہید ہوچکے ہیں۔ شہدا میں چھ بچےاور ایک خاتون بھی شامل ہے۔ دوسری جانب متحدہ عرب امارات، فرانس، چین اور دیگر ممالک نےغزہ میں تازہ پیش رفت پر بحث کے لیے کل سلامتی کونسل کا بند کمرہ اجلاس بلانے کی درخواست کی ہے۔

ادھر مرکز اطلاعات فلسطین نے وزارت صحت کے حوالے سے بتایا کہ اسرائیلی حملے میں 203 افراد زخمی ہوچکے ہیں۔ اسرائیل نے دعویٰ کیا ہے کہ غزہ سے ایک ناکام راکٹ فائر کے نتیجے میں جبالیہ کیمپ میں بچوں سمیت عام شہری مارے گئے۔ العربیہ اور الحدث کے نامہ نگار نے اطلاع دی ہے کہ جبالیہ کیمپ میں ہلاکتوں کی تعداد 7 تک پہنچ گئی ہے جن میں بچے بھی شامل ہیں۔ متعدد افراد زخمی بھی ہوئے ہیں۔


اسلامی جہاد تحریک کے عسکری ونگ ونگ القدس بریگیڈز نے ہفتے کے روز کہا کہ اس نے تل ابیب، اشدود، عسقلان اور سدیروت پر بڑے پیمانے پر راکٹ حملے کیے ہیں۔ ’سرایا القدس‘ نے ٹیلی گرام پر اپنے اکاؤنٹ کے ذریعے غزہ میں تنظیم کے کمانڈر تیسیر الجعبری کی ہلاکت کے ردعمل میں راکٹ فائر کے مناظر کے کلپس بھی شائع کیے اور بتایا کہ یہ راکٹ اسلامی جہاد کی طرف سے داغے گئے ہیں۔

نامعلوم اسرائیلی میڈیا کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ غزہ سے داغے گئے بڑے راکٹ عسقلان کے بعد عسقلان اور سدیروت پر گرنے کے نتیجے میں متعدد مکانات اور ایک فیکٹری کو نقصان پہنچا۔ قابل ذکر ہے کہ اسرائیل نے ہفتے کے روز غزہ پر فضائی حملے کیے تھے، جس کے جواب میں اسلامی جہاد نےصہیونی ریاست کے کئی شہروں پر راکٹ فائر کیے۔

بشکریہ العربیہ ڈاٹ نیٹ

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔